مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آرمڈ فورس سپیشل پاورز ایکٹ کے جیسے ڈراکونین قانون کے تحت بھارتی فوج کسی کو جوابدہ نہیں: محمد فیض
لندن ... بھارت کے زیر قبضہ کشمیر کی صورتحال انتہائی سنگین ہے، بھارتی فوج آزادی کی آواز کودبانے کیلئے ظلم کاہر حربہ آزما رہی ہے۔ بھارتی فوجی لوگوں کوکچلنے کیلئے عصمت دری ،آتشزنی اور دیگر حربے اختیار کررہے ہیں، ان خیالات کا اظہار جے کے ایل ایف کے لندن برانچ کے صدر محمد فیض نے برطانوی پارلیمنٹ میں نیشنز ودآئوٹ سٹیٹس کے زیر اہتمام دولت مشترکہ میں شامل ممالک کی چھوٹی اقوام کے حق خود اختیاری اور حقوق انسانی سے انکار کے زیر عنوان سیمینار میں تقریرکرتے ہوئے کیا۔ انھوں نے کہا کہ آرمڈ فورس سپیشل پاورز ایکٹ کے جیسے ڈراکونین قانون کے تحت بھارتی فوج کو مکمل اختیار دے دیاگیا ہے اس قانون کے تحت وہ اپنے کسی بھی گھنائونے اور شرمناک جرم کیلئے جوابدہ نہیں ہیں، انھوں نے کہا کہ ’’ اقوام بے ملک‘‘ نامی یہ تنظیم آزادی کے حصول تک ہمیں بولنے اور ایک ساتھ چلنے کیلئے ایک بہت بڑا پلیٹ فارم ہے، اقوام بے ملک نامی تنظیم کے بانی رکن جگدیش سنگھ نے اپنی تقریر میں جے کے ایل ایف کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ یہ کشمیر کے اتحاد اور مکمل آزادی کیلئے جدوجہد کرنے والی منقسم جموں وکشمیر کی واحد ملکی تحریک ہے۔ دیگر مقررین میں ڈاکٹر جواد ملام گراہام ولیم صنم ،یوگالنگم ،سوکالنگم، برنارڈ ڈیوب، محراب بلوچ ،حکیم واڈھیلہ، لاکھو لوہانہ ، ڈورس جونز اور رابرٹ تمانجی جیسی معروف شخصیات شامل تھیں۔