مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
اسلام آباد: اسلامی نظریاتی کونسل نے ایک ساتھ 3 طلاقیں دینے کی سزا پر اتفاق رائے نہ ہونے کی وجہ سے وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ کرلیا۔ علماء سے تجاویز لینے کیساتھ سیمینارز کا بھی انعقاد کیا جائے گا۔بیک وقت تین طلاقوں پر سزا تجویز کرنے کا معاملہ، اسلامی نظریاتی کونسل کے اجلاس میں اتفاق رائے نہ ہوسکا۔ سزا کے تعین کیلئے تمام مکاتب فکر کے علماء سے رائے لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ایک ساتھ تین طلاقوں کے معاملے پر علماء کو خطوط لکھ کر اپنی تجاویز دینے کے لیے کہا جائے گا۔ اسلامی نظریاتی کونسل اتحاد تنظیمات مدارس دینیہ سے بھی رائے لے گی جبکہ وسیع تر اتفاق رائے کے لیے سیمینارز بھی منعقد کیے جائیں گے۔کونسل کے مطابق مکمل اتفاق رائے ہونے کی صورت میں بیک وقت تین طلاقیں دینے والے شخص کے لیے سزا کا تعین کیا جا سکے گا۔ کونسل نے ایک ساتھ تین طلاقیں دینے والے شخص کے لیے 6 ماہ قید، ایک لاکھ جرمانہ یا دونوں سزائیں بیک وقت دینے کی سفارش کی تھی۔چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل قبلہ ایاز کا کہنا ہے کہ طلاق یافتہ خواتین مسائل کا شکار اور بے گھر ہو جاتی ہیں۔ حکومت نے کہا ہے کہ سزاؤں کا تعین بھی اسلامی نظریاتی کونسل کرے۔