مقبول خبریں
روٹری کلب کے راہنما ڈاکٹر سہیل قریشی کے اعزاز میں سماجی کمیونٹی شخصیت چوہدری محمود کا استقبالیہ
پاکستان سے آئے وکلا کے اعزاز میں ورلڈ وائیڈ سالیسٹرز کے ڈائیریکٹر محمد اشفاق کا استقبالیہ
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجابت حسین کا کنزرویٹو پارٹی لیڈر شپ کیلئے وزیرخارجہ جیریمی ہنٹ کی حمایت کا اعلان
بے نظیر بھٹو: چراغ بجھ گیا لیکن روشنی زندہ ہے
پکچرگیلری
Advertisement
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
اسلام آباد: اسلامی نظریاتی کونسل نے ایک ساتھ 3 طلاقیں دینے کی سزا پر اتفاق رائے نہ ہونے کی وجہ سے وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ کرلیا۔ علماء سے تجاویز لینے کیساتھ سیمینارز کا بھی انعقاد کیا جائے گا۔بیک وقت تین طلاقوں پر سزا تجویز کرنے کا معاملہ، اسلامی نظریاتی کونسل کے اجلاس میں اتفاق رائے نہ ہوسکا۔ سزا کے تعین کیلئے تمام مکاتب فکر کے علماء سے رائے لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ایک ساتھ تین طلاقوں کے معاملے پر علماء کو خطوط لکھ کر اپنی تجاویز دینے کے لیے کہا جائے گا۔ اسلامی نظریاتی کونسل اتحاد تنظیمات مدارس دینیہ سے بھی رائے لے گی جبکہ وسیع تر اتفاق رائے کے لیے سیمینارز بھی منعقد کیے جائیں گے۔کونسل کے مطابق مکمل اتفاق رائے ہونے کی صورت میں بیک وقت تین طلاقیں دینے والے شخص کے لیے سزا کا تعین کیا جا سکے گا۔ کونسل نے ایک ساتھ تین طلاقیں دینے والے شخص کے لیے 6 ماہ قید، ایک لاکھ جرمانہ یا دونوں سزائیں بیک وقت دینے کی سفارش کی تھی۔چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل قبلہ ایاز کا کہنا ہے کہ طلاق یافتہ خواتین مسائل کا شکار اور بے گھر ہو جاتی ہیں۔ حکومت نے کہا ہے کہ سزاؤں کا تعین بھی اسلامی نظریاتی کونسل کرے۔