مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
سانحہ راولپنڈی سازش تھی جسکا مقصد امن کیلئے حکومتی کوششوں کو سبوتاژ کرناتھا: ہائی کمشنر
لندن ... جمعیت علما برطانیہ کے امیر مفتی محمد اسلم کی قیادت میں برطانیہ کے مسلم علما کے ایک وفد نے پاکستانی ہائی کمشنر واجد شمس الحسن سے ملاقات کی۔ ان رہنماوٴں نے سانحہ راولپنڈی پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ اس واقعہ میں ملوث عناصر کو قانون کے کٹہرے میں لاکر سخت سزا دی جائے۔ وفد نے ہائی کمشنر کے ذریعے وفاقی اور پنجاب حکومتوں سے مطالبہ کیا کہ جن دہشت گردوں نے معصوم لوگوں کو مارا اور بھاری مالی نقصان کیا ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ وفد نے ہائی کمشنر کو ایک یادداشت بھی پیش کی اور ان سے کہا کہ اسے وفاقی حکومت تک پہنچایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس واقعہ پر برطانیہ کے علماء اور کمیونٹی کو سخت تشویش ہے اور وہ اپنے جذبات کو وفاقی حکومت تک پہنچانا چاہتے ہیں۔ اس موقع پر راولپنڈی میں جاں بحق ہونے والوں کے لئے دعا بھی کی گئی۔ ہائی کمشنر واجد شمس الحسن نے کہا کہ وہ اس واقعہ کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ انہوں نے اس واقعہ کو ملک کے خلاف سازش قرار دیا اور کہا کہ اس کا مقصد حکومت کی جانب سے امن کے لئے کی جانے والی کوششوں کو سبوتاژ کرنا ہے۔ انہوں نے وفد کو یقین دلایا کہ وہ ان کی سفارشات کو حکومت پاکستان تک پہنچائیں گے اور اس واقعہ میں ملوث عناصر کو قرار واقعی سزا دی جائے گی۔ انہوں نے علماء کرام کی جانب سے اس سانحہ کے بعد صبرو تحمل کرنے کی تعریف کی اورکہا کہ اس طرح کے معاملات کو قانونی اور پرامن طریقے سے حل کیا جانا ضروری ہے۔ وفد کے ارکان نے اس سانحے کے بعد حکومت پاکستان کی جانب سے کئے گئے اقدامات پر اطمنان کا اظہار کرتے ہوئے ہائی کمشنر کا شکریہ ادا کیا۔ وفد ختم نبوت ایجوکیشن سنٹر برمنگھم، انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ، عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت، علماء رابطہ کونسل برطانیہ، سواد اعظم اہلسنت اور جمعیت علماء برطانیہ کے علماء پر مشتمل تھا۔ جس میں مفتی محمد اسلم، سہیل باوا، مفتی عبدالوہاب، مولانا اسلام علی شاہ، مولانا اسلم زاہد، مولانا اسد میاں شیرازی، قاری امداد اللہ، قاری ممتاز حسین، مولانا جمیل احمد بندانی، مفتی خالد، حافظ اشفاق، مولانا عارف راجہ، مولانا عطا اللہ خان، مولانا محمد قاسم، حافظ محمد بشیر، قاری نیاز احمد اور دیگر شامل تھے۔