مقبول خبریں
بین الاقوامی میڈیا نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کی کلی کھول دی ہے:سردار مسعود خان
ڈیبی ابراھم کی قیادت میں ممبران پارلیمنٹ اور کمیونٹی رہنماؤں کی لارڈ طارق احمد سے ملاقات
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز اورسیمینارز منعقد کریگی : راجہ نجابت
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کی وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور شاہ غلام قادر سے ملاقات
پارک ویو کمیونٹی سنٹر شہیر واٹر میں ہمنوا یو کے کے زیرِ اہتمام یوم آزادی پاکستان تقریب کا انعقاد
9ستمبر کو اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے باہر بھرپور مظاہرہ کرینگے:راجہ نجابت حسین
سوچنے کے موسم میں سوچنا ضروری ہے!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
عمران خان کو منشور پر عمل کرنے کے لیے پورا موقع دینا چاہیے: راجہ سجاول حسین
اولڈہم:قیام پاکستان سے لیکر اب تک جتنی بھی سیاسی جماعتوں اور آمریت نے پاکستان میں برسر اقتدار آکر بلندو باغ دعوے کیے لیکن قائد اعظم محمد علی جناح کے خوابوں کو حقیقت کا رنگ بھرنے میں کسی نے سنجیدگی سے کام نہیں کیا اقرا پروری غیر منصفانہ نظام عدل اہلیت کی پامالی جاگیردارانہ اور سرمایہ دارانہ نظام نے ملک کی جڑوں کو کھوکھلا کر کے رکھ دیا اب وزیراعظم عمران خان نے آپنے مصمم ارادے اور سخت محنت اور عوام کے اعتماد سے ملک کی باگ دوڑ سنبھال لی ہے اور باقی تمام سیاسی قوتوں کو سیاسی بالغ نظری کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور عمران خان کو عوام سے کیے گئے وعدے اور منشور پر عمل کرنے کے لیے پورا موقع دینا چاہیے۔ان خیالات کا اظہار آزاد کشمیر مسلم لیگ ن کے سابق راہنما اور متحرک سیاسی سماجی شخصیت راجہ سجاول حسین نے میڈیا کو دیے گئے اپنے ایک بیان میں کیا۔ان کا مذید کہنا تھا کہ بحثیت کشمیری ہم توقع کرتے ہیں کہ وزیراعظم عمران خان کشمیری عوام کے دیرینہ مسئلہ کو حل کروانے میں بھرپور کردار ادا کرتے ہوئے اسے حل کروائیں گے اور امید کرتے ہیں کہ وہ سابق حکمران طبقے کی طرح سرد خانے کی زینت نہیں بنائیں گے ۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تمام قوتوں کو جذبہ محب الوطنی کا عملی مظاہرہ کرتے ہوئے موجودہ حکومت کے ہر مثبت اقدام کی جو ملک اور عوام کی بہتری کے لیے ہر ممکن مدد کرنی چاہیے نہ کہ تنقید برائے تنقید کی پالیسی اپناتے ہوئے مادر وطن کو مذید ہستی کی طرف دھکیلنا چاہیے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم بیرون ملک بسنے والے پاکستان اور آزاد کشمیر کی تعمیر وترقی کے لیے ہر ممکن کردار ادا کرنے کے لیے تیار ہیں بشرطیکہ ہمیں مکمل جانی و مالی تحفظ فراہم کیا جائے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر