مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
وویمن آرگنائزیشن خوش آمدید کے زیر اہتمام پاکستان کے یوم آزادی پرتقریب کا انعقاد
آشٹن انڈر لائن:پاکستان کی 71ویں یوم آزادی کو دنیا بھر میں انتہائی جوش و خروش اور ایک نئے جذبے کے تحت منایا جارہا ہے اسی سلسلے میں عورتوں کا کردار بھی مثالی ہے اور وہ اپنے بچوں کو قیام پاکستان کی تلخ لیکن خوشگوار تاریخی حقائق کو بتانے کے لیے پروگراموں کا انعقاد کر رہی ہیں۔اسی حوالہ سے گریٹر مانچسٹر کے ٹاؤن آشٹن کے ٹرینٹی سنٹر میں وویمن آرگنائزیشن خوش آمدید کی جانب سے ایک تقریب کا انعقاد ہوا جسمیں میں خواتین اور بچوں نے شرکت کی۔اس پر مسرت اور تاریخی موقع پر نگینہ عمران کا کہنا تھا کہ پاکستان چودہ اگست 1947 کو ہمارے بڑوں کی قربانیوں سے معرض وجود میں آیا اور ہم اسی جذبہ اور تاریخی حقائق کو اپنے بچوں کو بتا رہے ہیں تاکہ مادر وطن بارے آگاہی ہو۔آرگنائزیشن کی روح رواں اور تقسیم ہند کے وقت بھارت سے پاکستان ہجرت کرنے والی خاتون جمیلہ چوہدری کا کہنا تھا کہ ہم بیرون ملک بیٹھ کر پاکستان کا نام روشن کریں گے۔ان کا مذید کہنا تھا کہ بھارت سے ہجرت کر کے پاکستان آنے کے سب حالات اپنی آنکھوں سے دیکھے ہوئے ہیں۔ہم ہر مسلمان کو پیغام دیتے سرور ابراہیم کا کہنا تھا کہ ہیں کہ وہ تعلیم و تربیت اور عمل سے اسلام کا پیغام پھیلائیں۔سرور ابرہیم ہمیں اچھائ کو بلند کرنا چاہیے اور اگر ہمارے لیڈر اچھے ہوں گے تو پاکستان ترقی کرے گا،لیڈروں کا کا کام بادشاہت قائم کرنا نہیں ہے۔اس رنگ برنگی تقریب نے جہاں بچوں اور خواتین نے سبز رنگ کے لباس زیب تن کیے ہوئے تھے وہیں پاکستانی پرچموں سے ہال کو سجایا ہوا تھا اور انکا جذبہ دیکھ کر ایسے لگ رہا تھا جیسے سب کچھ پاکستان میں ہو رہا ہے۔ملی و قومی نغموں نے ماحول کو مذید خوشگوار بنا دیا۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر