مقبول خبریں
سیرت النبیؐ کے پیغام کو دنیا بھر میں پہنچانے کے لئے میڈیا کا کردار اہم ہے:پیر ابو احمد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ کی سطح پر کشمیری راہنمائوں اور کمیونٹی نے زندہ رکھا ہوا ہے:راجہ محمد یاسین
مانچسٹر:بیرون ممالک بسنے والے پاکستانی و کشمیری مادر وطن کیلئے ہر لمحہ سوچتے رہتے ہیں اور جب بھی کوئی مشکل وقت آتا ہے تو انکا کردار مثالی ہوتا ہے،مسئلہ کشمیر کو برطانیہ کی سطح پر کشمیری راہنمائوں اور کمیونٹی نے زندہ رکھا ہوا ہے اور اس کے علاوہ اسے اجاگر کرنے اور بھارتی فورسز کی وحشیانہ کارروائیوں کو جو انہوں نے مقبوضہ کشمیر میں جاری رکھی ہوئی ہیں انکو بین الاقوامی سطح پر پہنچانے میں اہم اور نمایاں کردار ادا کر رہے ہیں،ان خیالات کا اظہار آزاد کشمیر کے سابق وزیر اور مسلم کانفرنس کے مرکزی راہنما راجہ محمد یاسین نے مانچسٹر کے مقامی ریسٹورنٹ میں صحافیوں کے ساتھ ایک غیر رسمی بیٹھک کے موقع پر کیا،ان کا مزید کہنا تھا کہ برطانیہ میں بسنے والے ہم وطن ہمیشہ ہی مہمان نوازی میں پہل کرتے ہیں اور جب بھی یہاں آنا ہوتا ہے اپنا پن محسوس ہوتا ہے،میڈیا کے کردار بارے انکا کہنا تھا کہ یہاں پر صحافی حضرات ایمانداری سے اپنا کردار ادا کرتے ہیں،باوجود اس کے انکے پاس انتہائی محدود وسائل ہیں،انہوں نے زور دیکر کہا کہ تحریک آزادی کشمیر کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے برطانیہ بھر میں بسنے والے کشمیریوں کا کردار مرکزی حیثیت کا حامل ہے کیونکہ تقسیم پاک و ہند کے وقت مسئلہ کشمیر برطانیہ کا چھوڑا ہوا ادھورا ایجنڈا ہے،اس موقع پر صحافی برادری سے چوہدری محمد اسحاق،وسیم چوہدری،غلام مصطفیٰ مغل،محمد فیاض بشیر،مسلم کانفرنس برطانیہ کے سابق صدر چوہدری محمد بشیر رٹوی،سردار فہیم،شیخ سرفراز،شاہد آفتاب و دیگر بھی موجود تھے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر