مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
راجہ طاہر مسعود کو ملکہ برطانیہ کی طرف سے کمیونٹی کی خدمات پر برٹش ایمپائر میڈل سے نوازا گیا
مانچسٹر:برطانیہ کی سرزمین پر پچاس سال پہلے پاکستان اور آزاد کشمیر سے ہمارے آبائو اجداد روز گار کی غرض سے آئے اور ان کا ایک ہی مقصد تھا کہ خاندان اور عزیز و اقارب کی کفالت کرنا تھا وقت گزرنے کے ساتھ انہوں نے اپنے اہل وعیال کو برطانیہ میں بلا لیا اور وہ یہی مستقل طور پر رہائش پذیر ہوگئے اب زندگی کے تمام شعبہ جات میں پاکستانی و کشمیری نمایاں خدمات سرانجام دے رہے ہیں اور خدمات کے صلہ میں انہیں سول ایوارڈ سے نوازا جاتا ہے اور وہ برطانوی معاشرے کا ایک اہم حصہ بن گئے ہیں ،ایسا ہی ایک کارنامہ آزاد کشمیر کے ضلع میر پور کے نواحی گائوں موڑہ بڑی سے تعلق رکھنے والے دھرتی کے سپوت راجہ طاہر مسعود کا ہے کہ انہیں ملکہ برطانیہ کی طرف سے پچھلے 37 سالوں سے کمیونٹی کی خدمات کے صلہ میں برٹش ایمپائر میڈل سے نوازا گیا،ان کا کہنا تھا کہ ان کا زیادہ تر کام نوجوانوں کے ساتھ تھا جس میں انہوں نے انکو جمہوری روایات کو اجاگر کرنے اور ان کے روز مرہ کے مسائل کو سمجھنے میں مدد کی ،ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کی انتھک محنت و کاوشوں سے پٹیر برا میں بسنے والے نوجوانوں کی زندگی میں نمایاں تبدیلی آئی ،یاد رہے راجہ طاہر مسعود نے2014 میں پیٹر برا برٹش پاکستانی کمیونٹی کے حوالے سے تاریخی کتاب بھی شائع کی تھی اور پٹیر برا ٹائون میں پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کیا ٓمد کے ساٹھ سال مکمل ہونے پر ایک نمائش کا بھی انعقاد کیا جس سے اسلام آباد اور کمیوٹی کے صحیح تشخص کو اجاگر کرنے میں مدد ملی ،موصوف اس وقت کتابتیں لکھ چکے ہیں اور دسویں زیر طبع ہے ،برطانیہ بھر میں بسنے والی کشمیری و پاکستانی کمیونٹی ان کی نمایاں اور قابل رشک خدمت کوقدر کی نگاہ سے دیکھتی ہے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر