مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مسلم ہینڈز کی جانب سے شامی تارکین وطن کیلئے خوراک کا کانوائے روانہ کر نے کی تقریب
نا ٹنگھم :مسلم ہینڈز انٹرنیشنل نے شامی تارکین وطن کے لیے خوراک کا ایک بڑا کانوائے روانہ کر کے ایک اور مثال قائم کی ہے۔کانوائے کی روانگی کی تقریب نوٹنگھم میں مسلم ہینڈز انٹرنیشنل کے مرکزی دفتر میں ہوئی جس میں سیاسی، سماجی اور مذہبی رہنماوں کے علاوہ لارڈ میئر نوٹنگھم چوہدری لیاقت علی اور سابق لارڈ میئر کونسلر محمد صغیر راجپوت نے بھی خصوصی شرکت کی جبکہ برطانیہ بھر سے مسلم ہینڈز کے ٹرسٹیز بھی خاصی تعداد میں تقریب میں شریک ہوئے۔تقریب سے اپنے خطاب میں مسلم ہینڈز انٹرنیشنل کے چیئرمین صاحبزادہ سید لخت حسنین نے کہا کہ مسلم ہینڈز کا پچیس برس قبل قیام دکھی اور ضرورت مند انسانیت کی خدمت کے پیش نظر عمل میں لایا گیا تھا، برطانوی مسلم کمیونٹی نے ہمیشہ مسلم ہینڈز کی اپیل پر لبیک کہا اور اس بار رمضان کے آخری دنوں میں شامی مسلمانوں کی مدد کے لیے جب ہم نے اپیل لانچ کی تو پورے برطانیہ سے مسلم ہینڈز کو جو رسپانس ملا اس پر مسلم ہینڈز ان تمام خواتین و حضرات کا شکریہ ادا کرتی ہے جنہوں نے اس نیک کام میں اپنا حصہ ڈال کر یہ ثابت کیا کے انسانیت زندہ ہے اور درد دل رکھنے والے صرف اپنے لیے نہیں جیتے بلکہ دوسروں کی تکالیف کو بھی اپنا درد سمجھتے ہیں۔انھوں نے بتایا کہ یہاں سے شامی مسلمانوں کے لیے جو امدادی سامان روانہ ہو رہا ہے اس کی مالیت تقریباسولہ لاکھ پونڈز ہے جو پاکستانی روپے میں تقریبا پچیس کروڑ روپے بنتے ہیں اور یہ سامان تقریبا چھیاسی ہزار خاندانوں میں تقسیم کیا جائے گا۔چیئرمین مسلم ہینڈز نے کہا کہ مسلم ہینڈز اس وقت تک کوئی اپیل لانچ نہیں کرتا جب تک متعلقہ ملک سے کلیئرنس نہیں مل جاتی اس بار بھی ہم نے ترک ریڈ کریسنٹ سے رابطہ کیا اور اب یہ سارا سامان انہی کے ذریعے ترکی اور شام کی بارڈر پر پڑے بے یار و مدد گار ہمارے شامی مسلمان خاندانوں میں تقسیم کیا جائے گا۔لارڈ میئر نوٹنگھم چوہدری لیاقت علی نے مسلم ہینڈز کی کاوش کو سراہا اور کہا کہ نا صرف مسلم کمیونٹی بلکہ برطانیہ کی تمام کمیونٹیز کو ساتھ ملا کر ہمیں ہر اس جگہ مدد کرنا ہو گی جہاں بھی انسایت کو مدد کی ضرورت ہو گی اور اس سلسلہ میں مسلم ہینڈز انٹرنیشنل کا ایک بڑا ٹریک ریکارڈ ہے۔ تقریب سے خطاب کرنے والے دیگر مقررین نے شامی مہاجرین کے لیے امداد اکٹھی کرنے اور باعزت طریقے سے ان ضرورت مندوں کو بھیجنے کا انتظام کرنے پر مسلم ہینڈز کو مبارکباد پیش کی اور ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا۔ بعد ازاں فورسٹ ری کریئشن گرائونڈ سے اس کانوائے کو نعرہ تکبیر اللہ اکبر اور صلو و سلام کے ساتھ روانہ کیا گیا۔اس موقع پر بڑی تعداد میں مختلف مکاتب فکر اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والوں کے ساتھ پریس اور میڈیا کی بھی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔روانہ کیے گئے امدادی سامان میں آٹا، چاول اور پانی شامل ہے جو ترکی کے راستے ترکی اور شام کی سرحد پر شام سے جنگ کے دوران بے وطن اور بے گھر ہونے والے مہاجرین میں تقسیم کیا جائے گا ۔