مقبول خبریں
اولڈہم ہوپ ووڈ ہاؤس ہیلتھ سنٹر میں خواتین کو آگاہی دینے کیلئے لیڈی ہیلتھ ڈے کا اہتمام
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
تحریک کشمیر ڈنمارک کے زیر اہتمام کوپن ہیگن میں اظہار یکجہتی کشمیر کانفرنس کا انعقاد
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
کشمیر‘ جہاں خواب بھی آنسو کی طرح ہیں!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا
سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بی جے پی کی علیحدگی کے بعد محبوبہ مفتی کی حکومت ختم، صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا، رکن اسمبلی اسد الدین اویسی کا کہنا ہے مودی اور مفتی نے وادی جنت نظیر کو جہنم میں تبدیل کر دیا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں بی جے پی اور پی ڈی پی کی مخلوط حکومت کی ہنڈیا پھوٹ گئی، ریاستی اسمبلی میں بی جے پی کی علیحدگی کے بعد پی ڈی پی کی رہنما محبوبہ مفتی نے استعفیٰ دے دیا جس پر صدر رام ناتھ کووند نے گورنر راج نافذ کر دیا۔ گورنر این این وہرہ چوتھی بار ریاست میں حکومتی امور سر انجام دیں گے، اس سے پہلے مقبوضہ کشمیر میں دو ہزار آٹھ، دو ہزار پندرہ اور سولہ میں بھی گورنر راج نافذ کیا گیا تھا۔ادھر بھارتی پارلیمنٹ کے ایوان زیریں لوک سبھا کے رکن اسد الدین اویسی بی جے پی پر برس پڑے، کہتے ہیں،،مودی سرکار کب تک اپنی ناکامیاں چھپائے گی۔ذرائع کا کہنا ہے گورنر راج چھ ماہ تک نافذ رہ سکتا ہے،جسکے بعد صدر راج نافذ ہو سکتا ہے لیکن اسکے لئے اسمبلی کی منظوری درکار ہے۔