مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
برطانیہ میں اپنی تہذیب سےدور ہوتی نسل نوکوحسینی فکر بتانے کی ضرورت ہے:سید ریاض حسین شاہ
لوٹن ... جماعت اہلسنت پاکستان کے مرکزی ناظم اعلیٰ علامہ پروفیسر سید ریاض حسین شاہ نے کہا ہے کہ حضورؐ کے صحابہ عظیم المرتبت تھے۔ سچے تھے اور ان کی تربیت سچی تھی۔ آج ہمیں چاہئے کہ اپنے آئیڈیلز ٹھیک کریں اور اپنی اولادوں کو حضرت محمد مصطفی اور آل محمد کی محبت سکھائیں اور قرآن مجید سکھائیں۔ آج تہذیب اور تمدن ہمارے ہاتھوں سے نکلتی جا رہی ہے نوجوان مذہب سے دور ہوتے جا رہے ہیں اپنے بچوں کو سکھائو کہ حسینؓ کون تھے۔ حضرت خواجہ غریب نواز کون تھے۔ نماز کی اہمیت بتائو کہ وہ نماز جو حسینؓ نے نیزے کی نوک پر بھی ادا کی۔ حسینیوں کا یہی طریقہ ہے کہ وہ نماز قضا نہیں کرتے، انہوں نے کہا جماعت اہلسنت نے فیصلہ کیا ہے کہ سال ٢٠١٤ کو عالمی سطح پر قرآن کے سال کے طور پر منائیں گے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ اسلامیہ غوثیہ ویسٹ بورن روڈ لوٹن میں منعقدہ 30 ویں شہدائے کربلا کانفرنس سے بحیثیت صدر تقریب خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ عمل ماپنے کا میزان اہل بیت ہیں۔ آل محمدؐ ہیں، وہ بتائیں گے کہ کسی کے عمل کی حیثیت کیا ہے۔ حقیقت تو یہ ہے کہ لا الٰہ اللہ کی بنیاد حسین ہیں۔ یزید کے متعلق انہوں نے کہا کہ اس نے نجد میں جنم لیا۔ یہ شخص اعلانیہ شعائر اسلام کا مذاق اڑاتا تھا۔ اپنے صدارتی خطاب میں انہو ںنے مزید کہا کہ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ جن عظیم مقاصد کے لئے امام عالی مقام اور حضرت علی المرتضیٰ ؓ کے خاندان کے نفوس قدسیہ نے اپنا گھر بار، وطن، جان و مال سب کچھ قربان کر دیا تھا ان کو اپنے مقصد اولین بنائیں اور برطانیہ میں ہماری نسل جو اپنی تہذیب و تمدن اور اپنے مذہبی اقدار اور تاریخی ورثہ سے دور ہوتی جا رہی ہے ان کو حسینی فکر بتانے کی ضرورت ہے۔ میزبان کانفرنس مرکزی جماعت اہل سنت یورپ کے مرکزی رہنما علامہ قاضی عبدالعزیز چشتی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نواسہ رسول نے دین کو بچانے کے لئے جو عظیم قربانی دی وہ ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ جامعہ اسلامیہ غوثیہ لوٹن کا یہ امتیاز ہے کہ ہم یہاں تمام اسلامی ایام کو ان کے مخصوص دن پر ہی مناتے ہیں۔ صاحبزادہ رضا کاظمی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امام حسین عالی مقام نے جو عظیم قربانی پیش کی ہے اس باعث ان کا چرچا ہمیشہ رہے گا۔ صاحبزادہ ضیاء المصطفیٰ نے کہا کہ اگر آپ ولایت کے طالب ہیں، اللہ پاک کا قرب حاصل کرنا چاہتے ہیں تو حب حسین ولایت کا فوری راستہ ہے۔ صاحبزادہ فرید کاظمی، محمد صدیق، نور سلطان اشرفی اور دیگر نے منظوم کلام رقت آمیز آواز میں پیش کیا۔ کانفرنس سے مولانا قاضی عبدالرشید چشتی، حافظ نور سلطان، حافظ محمد کامران، حافظ محمد شعیب، سید نادر حسین شاہ، قاری واجد، حافظ جبار کیانی، مولانا حسین شاہ کاظمی اور متعدد دیگر علماء کرام نے بھی خطاب کیا۔ کانفرنس میں لوٹن کے گرد و نواح سمیت ملک کے مختلف حصوں سے لوگوں نے شرکت کی اس موقع پر سابق میئر لوٹن ریاض بٹ نے زور دیا کہ پاکستانی نوجوان برطانوی پولیس میں ملازمتوں کا جو خلاء ہے اس کو پُر کریں۔ یہ ملک کیلئے مفید اور کمیونٹی کیلئے ضروری ہے۔