مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ڈاکٹر شہباز عرف جوجو اور گولڈن آرٹس کے ڈائریکٹر نجیب اللہ کی جانب سے افطار پارٹی
مانچسٹر :جے جے گروپ آف ریسٹورنٹس کے ڈائریکٹر ڈاکٹر شہباز عرف جوجو اور گولڈن آرٹس کے نجیب اللہ کی جانب سے جےجےدیسی کچن ریسٹورنٹ میں ایک افطاری پارٹی کا اہتمام کیا گیا۔اس موقع پر ڈاکٹر شہباز عرف جوجو کا کہنا تھا کہ ہمیں نہ صرف برطانیہ بلکہ کسی بھی ملک کے افراد ہوں امن کا پیغام عام کرنا چاہیے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمیں آپس میں باہمی اتحاد و اتفاق سے رہنے کے لیے ایک دوسرے کی مذہبی و دیگر تقریبات میں شرکت کرنی چاہیے تاکہ برطانوی معاشرے میں رہتے ہوئے ہم ایک مثال قائم کر سکیں اسی وجہ سے ہم نے افطاری کا اہتمام کرکے مختلف مذاہب کے افراد کو مدعو کیا ہے تاکہ محبت کا پیغام عام ہو سکے۔گولڈن آرٹ گروپ کے ڈائریکٹر نجیب اللہ کا کہنا تھا ہمارا سب سے اہم مقصد یہ ہے کہ تمام کمیونٹیز کے افراد کو ایک چھت تلے اکٹھا کر کے اتحاد و اتفاق کے پیغام کو پھیلائیں اور ایسی قوتوں کو واضح پیغام دیں جو رنگ ونسل،مذہب، کے نام پر ہمیں تقسیم کرنے پر عمل پیرا ہیں ۔رمضان المبارک میں افطار پارٹی پر مختف مذاہب کے افراد کو مدعو کرنا ایسی قوتوں کے منہ پر طمانچہ مارنے کے مترادف ہے۔مہمان خصوصی ڈپٹی لارڈ میئر مانچسٹر کونسلر عابد چوہان کا کہنا تھا کہ اسلامو فوبیا کی وبا عام ہے برطانوی معاشرے میں اسکی کوئ گنجائش نہیں ہے۔لیبر پارٹی تمام مذاہب کے افراد کو عزت کی نگاہ سے دیکھتی ہے اور اس بارے ٹھوس اور واضح پالیسی ہے۔معاشرے کے اندر مذہب کے نام پر عدم برداشت قابل قبول نہیں ہے ہم سب کو مل جل کر معاشرے میں امن و امان قائم رکھنے کے لیے کام کرنا چاہیے۔ روبینہ خان کا کہنا تھا کہ برطانیہ میں اسلاموفوبیا بڑھ رہا ہے۔ دنیا ترقی کی جانب بڑھ رہی ہے امن پسندی اور اسلاموفوبیا کو روکنے کے لیے اقوام متحدہ اور دنیا کا کردار اچھا نہیں ہے۔ جہاں بھی کوئ بھورے رنگ کا شخص نظر آئے گا خطرہ محسوس ہوتا ہے اس ملک میں رہتے ہوئے ہمیں قوانین کے اندر رہتے ہوئے تمام معاملات زندگی سر انجام دینے چاہئیں۔ افطار پارٹی میں ڈاکٹر یونس پرواز و دیگر کمیونٹی کے افراد نے بھرپور شرکت کی۔