مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آستانہ عالیہ مدنیہ چورائیہ آشٹن ٹاؤن میں مدنی برادران کی جانب سے افطار پارٹی
آشٹن انڈر لائن:تاریخ اسلام میں جو مرتبہ و مقام حضرت علی رضہ اللہ عنہ مولائے کائنات کو حاصل ہے وہ کسی اور ہستی کے نصیب میں نہیں ہوا۔حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ علی رضہ اللہ عنہ مجھ سے ہے اور میں علی سے ہوں۔ آیت کریم کا ترجمہ ہے کہ جو نماز پڑھتے ہیں اور حالت رکوع میں صدقہ کرتے ہیں۔ یہ آیت حضرت علی رضہ اللہ عنہ کی شان میں نازل ہوئی۔یہ روح پرور بیان ادارہ نورالاسلام فیصل آباد کے بانی پیر ابو احمد محمد مقصود مدنی نےآستانہ عالیہ مدنیہ چورائیہ آشٹن میں مدنی برادران اور امجد حسین ، چوہدری مطلوب حسین، حاجی عبدالقیوم ، حاجی محمد اشفاق وارثی، لعل قربان کی طرف سے رکھی گئی افطار پارٹی کے موقع پر حضرت علی رضہ اللہ عنہ کی شہادت بارے بیان کرتے ہوئے کیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جس کا میں محبوب ہوں اس کے علی محبوب ہیں۔اے اللہ اس سے محبت کر جو علی رضہ اللہ عنہ سے محبت رکھے اور اس سے عداوت رکھ جو علی سے عداوت رکھے ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ مسلمان کئی روز سے قلعہ خیبر پر حملہ کر رہے تھے لیکن وہ فتح نہیں ہوا آخر ایک دن حضرتِ محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ کل میں جھنڈا اسکے ہاتھ میں دوں گا جسکے ہاتھ پر اللہ تعالیٰ خیبر کو فتح کرے گا۔وہ ایسا شخص ہو گا جو رب العالمین اور اس کے رسول سے محبت کرتا ہو گا اور رب العالمین اور رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم کو اس سے محبت ہو گی۔دوسرے دن صحابہ کرام حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی طرف دیکھ رہے تھے کہ وہ کون خوش نصیب ہو گا جسے فتح کا جھنڈا دیا جائے گا۔سرکار کی نگاہیں حضرت علی رضہ اللہ عنہ کی طرف اور جھنڈا انہیں تھما دیا ۔پیر ابو احمد محمد مقصود مدنی کا مزید کہنا تھا کہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے حجتہ الوداع سے واپسی پر غدیر خم کے مقام پر حضرت علی رضہ اللہ عنہ کا ہاتھ پکڑ کر کہا کہ جس کا میں محبوب ہوں اس کے علی رضہ اللہ عنہ محبوب ہیں۔شان حضرت علی رضہ اللہ عنہ بارے ان کا مزید کہنا تھا کہ حضرت علی رضہ اللہ عنہ نے فرمایا کہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھے علم کا ایک ہزار باب عطا فرمایا اور حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ حضرت علی رضہ اللہ عنہ کسی بھی حال و وقت میں مسجد نبوی سے گزر سکتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ حضرت ابو سعید خودری رضہ اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ ہم منافق کی پہچان علی رضہ اللہ عنہ کے ذکر سے کر لیتے ہیں۔حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ علی مجھ سے ہے اور میں علی سے ہوں افطار پارٹی میں صنوبر گل،محمد ندیم ارشاد،علی حسن ، شہباز حسین مدنی، حاجی ظفر، عبدالمجید، عمران مدنی،شہبان مدنی ، شہباز حسن مدنی،سہبان مدنی ،عثمان فرزند مدنی و دیگر نے شرکت کی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر