مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آزاد کشمیر میں آئینی اصلاحات کی منظوری ن لیگ کا اہم کارنامہ : ن لیگ برطانیہ
اولڈہم:مسلم لیگ ن کی حکومت نے مدت ختم ہونے سے پہلے آزاد کشمیر کی حکومت کو مذید بااختیار بنانے کے لیے آئینی اصلاحات کی منظوری دی اس پر برطانیہ بھر میں بسنے والے کشمیری اور مسلم لیگ ن کے حامی و عہدیداران انتہائی خوش ہیں اس فیصلے کو کشمیری قوم کے لیے اہم قرار دیتے ہوئے اس کا سرا آزاد کشمیر کے وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان اور سینیئر وزیر چوہدری طارق فاروق اور اسپیکر شاہ غلام قادر اور قائد پاکستان محسن کشمیر میاں نواز شریف ،سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی ۔آرمی چیف کو دیتے ہیں جن کی معاونت سے سب ممکن ہوا ۔اس بارے آزاد کشمیر مسلم لیگ ن برطانیہ کے سینیئر نائب صدر راجہ مقصود حسین کاکڑوی کا کہنا تھا کہ کہ ہم قائد پاکستان اور محسن کشمیر میاں نواز شریف نے جو کردار ادا کیا ہے انکا شکریہ ادا کرتے ہیں جن کی وجہ سے یہ ممکن ہوا ۔مسلم لیگ ن برطانیہ ویورپ کے سفارتی ونگ کے چیئرمن کونسلر عتیق الرحمن کا کہنا تھا کہ بیرون ممالک بسنے والے کشمیری اس اقدام کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں آزاد کشمیر حکومت کو با اختیار بنانے کا کام بہت پہلے ہو جانا چاہیے تھا پھر بھی یہ ایک اہم کارنامہ ہے اور مزید اصلاحات کی طرف پہلا قدم ہے ابھی مزید آئینی اصلاحات کی ضرورت ہے۔ اس کا سرا وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور سینیئر وزیر چوہدری طارق فاروق کو جاتا ہے۔مسلم لیگ ن برطانیہ کے چیئرمین و مذہبی شخصیت راجہ آفتاب شریف کا کہنا تھا کہ میں پاکستان کی سبکدوش ہونے والی حکومت، سیکورٹی کونسل اور بالخصوص آرمی چیف کا ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ ایک تاریخی کام ہے اور ان لوگوں کے لیے جواب ہے جو یہ کہتے تھے کہ آزاد کشمیر کی حکومت بے اختیار ہے۔اس موقع پر حاجی اصغر بھٹی بھی موجود تھے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر