مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان نے گلگت بلتستان آرڈر 2018ء پر بھارتی تحفظات مسترد کر دیئے
اسلام آباد: پاکستان نے گلگت بلتستان آرڈر 2018ء پر بھارتی تحفظات مسترد کر دیئے ہیں۔ دفترِ خارجہ کا کہنا ہے کہ جموں وکشمیر کے بھارتی حصہ ہونے کا دعویٰ مسترد کرتے ہیں۔ جموں وکشمیر ایک متنازع علاقہ ہے۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے قراردادوں میں اس کے تنازع کی حیثیت کو تسلیم کیا گیا ہے۔ جموں و کشمیر کی حتمی حیثیت کا تعین اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق ہو گا۔ترجمان دفترِ خارجہ کا کہنا ہے کہ اقوامِ متحدہ کی قرارداد کے مطابق کشمیر کا فیصلہ جمہوری طریقے سے غیر جانبدارانہ ہو گا۔ یہ قراردادیں کشمیریوں کو حقِ رائے کی آزادی دیتی ہیں، جسے پوری دنیا نے تسلیم کیا۔دوسری جانب ایٹمی تجربات کے 20 سال مکمل ہونے پر دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان نیوکلیئر سپلائر گروپ میں شمولیت کا خواہشمند ہے۔ترجمان دفترِ خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ پاکستان کا ایٹمی پروگرام دفاعی مقاصد کے لئے ہے۔ پاکستان نے 20 سال ایٹمی طاقت کے عدم پھیلاؤ پالیسی پر سختی سے عمل کیا۔ پاکستان 2050ء تک ایٹمی توانائی سے 40 ہزار میگاواٹ بجلی کے منصوبے پر عمل پیرا ہے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کو 1998ء میں اپنے دفاع کیلئے ایٹمی تجربات کرنا پڑے۔ پاکستان کسی بھی جارحیت کا بھرپور جواب دینے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ پاکستان کے پاس جدید ترین ایٹمی ٹیکنالوجی موجود ہے۔