مقبول خبریں
چوہدری سعید عبداللہ ،چوہدری انور،حاجی عبدالغفار کی جانب سے حاجی احسان الحق کے اعزاز میں عشائیہ
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
یوم عاشور لہو لہو ، فساد پر 14ہلاک، کیا پنجاب کے سکون سے مضطرب دشمن مطمئن ہو گیا ؟
راولپنڈی ... پاکستان میں باالعموم اور پنجاب میں باالخصوص محرم کے پہلے دس دنوں میں خون خرابہ نہ ہونے پر مضطرب اور پریشان دشمن اگر یوم عاشور پر لاشوں کا ڈھیر لگا کر خوش ہے تو قوم کو فکر اس بات کی کرنی چاہیئے کہ دشمن کی املاک کو لگائی یہ آگ فرقہ پرستی کی آگ میں نہ بدل جائے۔ قوم موبائل فون بند ہونے پر واویلہ کرنے والوں سے صرف یہ پوچھ لے کہ اب کرفیو نافذ ہو گیا ہے تو کیا زندگی ختم ہوگئی؟ آدھی رات گزرنے تک دو گروہوں کے درمیان بڑھنے والی کشیدگی 14افراد کی جان لے چکی تھی اور پچاس کے قریب افراد زخموں سے نڈھال تھے۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ تصادم کا آغاز یوم عاشور کے جلوس کے اختتام کے بعد ہوا۔ یوم عاشور کا جلوس جب فوارہ چوک کے قریب واقع جامعہ تعلیم القرآن کے قریب سے گزر رہا تھا تو جامعہ سے جلوس جلد ختم کرنے کا اعلان کیا گیا اور اس کے بعد تصادم شروع ہو گا اور مشتعل افراد نے املاک کو نذر آتش کرنا شروع کر دیا۔ فسادیوں نے دیکھتے ہی دیکھتے مدرسہ تعلیم القران کو اور اس سے ملحقہ دکانوں کو نذر آتش کر دیا۔ نجی ٹی وی کے ایک پاکستانی رپورٹر نے ٹیلی فون پر کشمیر لنک لندن سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اہلسنت افراد کا کہنا ہے کہ جانی و مالی نقصان انکا زیادہ ہوا ہے۔ اس رپورٹر کا مزید کہنا تھا کہ مشتعل نما شرپسند افراد نے پولیس والوں سے سرکاری رائفلز چھین کر اس سے فائر بھی کئے۔ حکومتِ پنجاب کے ترجمان کے مطابق راولپنڈی میں کرفیو 24 گھنٹے کے لیے نافذ کیا گیا ہے جو 16 نومبر کو رات 12 بجے تک نافذ رہے گا۔ ترجمان کے مطابق کرفیو کا نفاذ پوٹھوہار اور راول ٹاؤن کے 19 تھانوں کی حدود میں ہو گا۔ آخری خبریں آنے تک وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف خود جاگ کر ریسکیو آپریشن کی نگرانی کر رہے ہیں۔