مقبول خبریں
نائجیریا کمیونٹی ایسوسی ایشن کا میئر چیئرٹی فنڈریزنگ ڈنر کا اہتمام ،مئیر کونسلر محمد زمان کی خصوصی شرکت
بریگزیٹ بحران :کنزرویٹو پارٹی کی تین خواتین ممبر کی آزاد گروپ میں شمولیت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
یوم عاشور لہو لہو ، فساد پر 14ہلاک، کیا پنجاب کے سکون سے مضطرب دشمن مطمئن ہو گیا ؟
راولپنڈی ... پاکستان میں باالعموم اور پنجاب میں باالخصوص محرم کے پہلے دس دنوں میں خون خرابہ نہ ہونے پر مضطرب اور پریشان دشمن اگر یوم عاشور پر لاشوں کا ڈھیر لگا کر خوش ہے تو قوم کو فکر اس بات کی کرنی چاہیئے کہ دشمن کی املاک کو لگائی یہ آگ فرقہ پرستی کی آگ میں نہ بدل جائے۔ قوم موبائل فون بند ہونے پر واویلہ کرنے والوں سے صرف یہ پوچھ لے کہ اب کرفیو نافذ ہو گیا ہے تو کیا زندگی ختم ہوگئی؟ آدھی رات گزرنے تک دو گروہوں کے درمیان بڑھنے والی کشیدگی 14افراد کی جان لے چکی تھی اور پچاس کے قریب افراد زخموں سے نڈھال تھے۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ تصادم کا آغاز یوم عاشور کے جلوس کے اختتام کے بعد ہوا۔ یوم عاشور کا جلوس جب فوارہ چوک کے قریب واقع جامعہ تعلیم القرآن کے قریب سے گزر رہا تھا تو جامعہ سے جلوس جلد ختم کرنے کا اعلان کیا گیا اور اس کے بعد تصادم شروع ہو گا اور مشتعل افراد نے املاک کو نذر آتش کرنا شروع کر دیا۔ فسادیوں نے دیکھتے ہی دیکھتے مدرسہ تعلیم القران کو اور اس سے ملحقہ دکانوں کو نذر آتش کر دیا۔ نجی ٹی وی کے ایک پاکستانی رپورٹر نے ٹیلی فون پر کشمیر لنک لندن سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اہلسنت افراد کا کہنا ہے کہ جانی و مالی نقصان انکا زیادہ ہوا ہے۔ اس رپورٹر کا مزید کہنا تھا کہ مشتعل نما شرپسند افراد نے پولیس والوں سے سرکاری رائفلز چھین کر اس سے فائر بھی کئے۔ حکومتِ پنجاب کے ترجمان کے مطابق راولپنڈی میں کرفیو 24 گھنٹے کے لیے نافذ کیا گیا ہے جو 16 نومبر کو رات 12 بجے تک نافذ رہے گا۔ ترجمان کے مطابق کرفیو کا نفاذ پوٹھوہار اور راول ٹاؤن کے 19 تھانوں کی حدود میں ہو گا۔ آخری خبریں آنے تک وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف خود جاگ کر ریسکیو آپریشن کی نگرانی کر رہے ہیں۔