مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بھا رت کی علی گڑھ یونیورسٹی سےقائد اعظم کی تصویر ہٹانا مودی کیلئے چیلنج بن گیا
علی گڑھ:بھارت کی علی گڑھ یونیورسٹی سے قائداعظم محمد علی جناح کی تصویر ہٹانا مودی سرکار کے لیے لوہے کے چنے چبانا ثابت ہوئی، مشتعل طلباء کو ڈنڈے کے زور سے روکا تو سوشل میڈیا پر سٹینڈ وِد اے ایم یو کا ہیش ٹیگ ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔ بھارتی انتہا پسندوں کے کہنے پر علی گڑھ یونیورسٹی سے قائد اعظم کی تصویر غائب کر دی گئی۔ بھارتی پولیس نے طلباء کو ڈنڈے کے زور پر روکا تو سوشل میڈیا پر مہم چل پڑی۔کیا مسلمان کیا ہندو، مختلف فرقوں کے لوگ اس غنڈہ گردی کے خلاف اٹھ کھڑے ہوئے۔ سٹینڈ وِد اے ایم یو کا ہیش ٹیگ ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔ بھارت کی نامور یونیورسٹیوں پر حملے کرنا بند کرو، علی گڑھ یونیورسٹی کے طلباء پر حملوں کی مذمت کرتے ہیں، طلباء مجرم نہیں، ان پر حملہ بھارت کے مستقبل پر حملہ ہے۔ صارفین سوشل میڈیا پر بھرپور احتجاج کر رہے ہیں۔بی جے پی کے وزیر سوامی پرساد نے قائد اعظم کو تقسیم ہند کے دوران عظیم ہستی قرار دیا ہے جس پر انہیں بھی تنقید کا سامنا ہے۔ علی گڑھ یونیورسٹی میں روایت رہی ہے کہ تمام تاحیات ممبرز کی تصاویر سٹوڈنٹس یونین آفس میں آویزاں کی جاتی ہیں۔ بانی پاکستان محمد علی جناح کی تصویر بھی یونیورسٹی کے اسی اصول کے تحت یونین آفس میں آویزاں تھی۔