مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
65 برس بعد نفرتیں ختم، کم جونگ اُن کی جنوبی کورین صدر سے ملاقات
سیئول: شمالی کوریا کے سربراہ کم جونگ اُن 65 برسوں سے تنی نفرت کی دیوار گراتے ہوئے جنوبی کوریا جا پہنچے اور صدر مون جائے اِن سے ہاتھ ملا لیا، دنیا پر منڈلاتے خوفناک ایٹمی جنگ کے بادل چھٹ گئے۔دونوں ملکوں کے عوام کیلئے یہ تاریخی لمحہ تھا جب شمالی اور جنوبی کوریا کے صدور کم جونگ اُن اور مون جائے اِن کے مابین مسکراہٹوں کا تبادلہ ہوا، گلدستے پیش کئے گئے اور دونوں ملکوں کے قومی ترانوں سے فضا گونج اٹھی۔کم جونگ اُن کا جنوبی کوریا پہنچنے پر پرتپاک استقبال ہوا، گارڈ آف آنر پیش کیا گیا جس کے بعد دونوں سربراہان مملکت میں ون آن ون ملاقات ہوئی اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال ہوا، بعد ازاں کم جونگ اُن جذبہ خیر سگالی کے طور پر جنوبی کوریا کے صدر کو دونوں ملکوں کے مابین ہائی سکیورٹی زون شمالی کوریائی سرحدی علاقے میں لے کر گئے۔