مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
انتخابات کے بعد ن لیگ اور پیپلز پارٹی سے اتحاد نہیں ہو سکتا: چیئرمین تحریک انصاف
مانچسٹر :اوورسیز پاکستانی ملک کا سب سے بڑا سرمایہ ہیں۔اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق نہ دینے میں مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی دونوں مخالف ہیں کیونکہ انہیں پتہ ہے کہ اکثریت ان کے حق میں ووٹ نہیں ڈالے گی اب اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کا فیصلہ چیف جسٹس آف پاکستان نے کرنا ہے ان سے انصاف کی توقع ہے۔ یہ بات چیت تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے مانچسٹر کے مقامی ریسٹورنٹ ہال میں نمل کالج کے چیرٹی ڈنر میں میڈیا سے خصوصی نشست کے دوران کیا ۔ان کا مزید کہنا تھا انتخابات کے بعد مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی سے اتحاد نہیں یو سکتا کیونکہ دونوں کے سربراہان کرپٹ ہیں اور میں پچھلے بائیس سالوں سے کرپشن کے خلاف لڑ رہا ہوں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ صاف و شفاف انتخابات کے غیر جانبدار نگران سیٹ اپ ضروری ہے کیونکہ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے میثاق جمہوریت پر دستخط کر کے باقی جماعتوں سے انکی رائے کا حق چھین لیا اور باریاں لینی شروع کر دیں۔ان کا کہنا تھا کہ اب الیکشن میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے ۔خیبرپختونخواہ میں بیس ممبران نے ووٹ بیچے اسی لیے انہیں نکالا ہے میں انکے نام بتا سکتا ہوں کہ کون کون ہیں۔باقی جماعتوں کو بھی بکنے والوں کے خلاف کارروائی کرنی چاہیے۔چوہدری سرور کو اپوزیشن اور ان اراکین نے ووٹ دیا جنہوں نے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر لی ہے اس لیے وہ سینیٹر منتخب ہوئے۔نمل کالج کی فنڈ ریزنگ کو احسن طریقے سے سرانجام دینے اور میزبانی کے فرائض برطانیہ کی نامور کاروباری شخصیت انیل مسرت نے کی۔صاحبزادہ جہانگیر۔فواد چوہدری ،نعیم الحق،پاکستانی نژاد برطانوی باکسر عامر خان کے علاوہ سیاسی سماجی کاروباری اور کمیونٹی شخصیات نے شرکت کی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر