مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برٹش پاکستانیوں کی جانب سے ہائی کمشنر پاکستان سید ابن عباس کے اعزاز میں عشائیہ
مانچسٹر:برٹش پاکستانی کمیونٹی کی جانب سے برطانیہ کے لیے پاکستان کے ہائی کمشنر سید ابن عباس کے اعزاز میں عشائیہ کا اہتمام کیا گیا تھا جس میں برطانیہ اور بالخصوص نارتھ ویسٹ کے کمیونٹی عمائدین نے شرکت کی۔ تقریب کی نظامت کے فرائض فضاء نیازی نے انجام دئیے جبکہ تلاوت کلام پاک کی سعادت ڈاکٹر یونس پرواز نے حاصل کی۔ قونصل جنرل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سات ماہ کی تعیناتی میں مانچسٹر کی پاکستانی کمیونٹی میں جو ٹیلنٹ دیکھا ہے اس سے خوشی ہو رہی ہے کہ پاکستان کا مستقبل بہترین ہاتھوں میں ہو گا۔ شیڈو منسٹر فار امیگریشن افضل خان کا کہنا تھا کہ نارتھ ویسٹ ریجن میں ایسے پاکستانی موجود ہیں جنھوں نے نہ صرف برطانیہ کی تعمیر و ترقی میں حصہ ڈالا ہے بلکہ وہ برطانیہ اور پاکستان کا فخر ہیں۔ممبر یورپین پارلیمنٹ ڈاکٹر سجاد حیدر کریم کا کہنا تھاکہ دنیا میں ڈرامائی تبدیلیاں رونما ہو رہی ہیں ۔بریگزیٹ کی وجہ سے بھی تبدیلی رونما ہو رہی ہے ۔برطانیہ کا سب سے بہترین دوست پاکستان ہے۔یورپین یونین نے بھارت کے ساتھ تجارتی معاہدہ کیا ہے اسے انتہائی صیغہ راز میں رکھا گیا جب میں نے یورپین یونین کے صدر سے اس بارے استفسار کیا تو ان کا کہنا تھا کہ برطانوی کشمیری کمیونٹی کی بہت بڑی اکثریت نے بریگذیٹ کے حق میں ووٹ دیا ہے تو آپ کے پاس بات کرنے کا کوئ حق نہیں ہے۔مہمان خصوصی ہائ کمشنر برطانیہ سید ابن عباس کا کہنا تھا کہ میرے لیے اتنی بڑی تعداد میں کمیونٹی کے افراد کے درمیان ہونا اعزاز کی بات ہے ۔ کشمیری مشکل گھڑی میں تنہا نہیں ہیں ہم کندھے سے کندھا ملا کر ساتھ کھڑے ہیں۔آج ڈاکٹر روبینہ شاہ کو ملکہ برطانیہ کی جانب سے ہائ شیرف مقرر کرنا ہم سب کے لیے باعث فخر ہے۔طالب علم ہمارا مستقبل ہیں ۔میڈیا کا کردار مثالی ہے۔خواتین کو ہمیں اپنے معاشرے میں جائز مقام دیے بغیر ہم آگے نہیں بڑھ سکتے۔ہمیں پاکستان کے پرچم تلے سب اختلافات بھلا کر اکٹھے ہیں جو مثالی ہے ۔نارتھ ویسٹ میں رہنے والی پاکستانی و کشمیری کمیونٹی خصوصاً کاروباری حضرات تاریخ بنا رہی ہے۔پاکستان 2030 تک دنیا کی تیسویں بڑی معیشت ہو گی ۔مسلم دنیا میں پاکستان ایک مستحکم ملک ہے۔برطانیہ یورپین یونین سے نکلنے کے بعد چین اور بھارت کے بعد پاکستان کی طرف دیکھ رہا ہے۔بیرون ممالک بسنے والوں نے ہمیشہ مشکل ترین حالات میں پاکستان کی مالی مدد کی ہے جو ناقابل فراموش ہے ۔آپ کے دل پاکستان کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔اس ملک میں رہتے ہوئے ہم کمیونٹی کے لیے ہر طرح کی خدمت کے لیے کوشاں کچھ کوتاہیوں ہو سکتی ہیں اسکے آپ کی معاونت کی ضرورت ہے۔پچھلے دنوں میں برطانیہ میں پاکستان مخالف مہم چلی اسے احسن طریقے سے نمٹایا کمیونٹی بھی اس بارے باخبر رہے۔ کاونسلرز، لارڈ مئیر، مئیرز ہائی شیرف ٹیچرز، وکلاء غرضیکہ ہر فیلڈ میں پاکستانی اپنی صلاحیتوں سے اپنا لوہا منوا رہے ہیں۔ ممبر یورپین پارلیمنٹ واجد حسین، ممبر پارلیمنٹ یاسمین قریشی، ممبر پارلیمنٹ سجاد حیدر کریم، کونسلر ربنواز، کونسلر نعیم، راجہ نجابت، چیئرمین ممبر بورڈ آف گورنرز امجد ملک، کونسلر شوکت، سابق مئیر اولڈہم عتیق الرحمان، سابق مئیر اولڈہم شعیب، کونسلر عابد چوہان اور دیگر کمیونٹی عمائدین شریک ہوئے۔ اس موقع پر حال ہی میں ہائی شیرف منتخب ہونے والی پہلی پاکستانی مسلم خاتوں ڈاکٹر روبینہ شاہ بھی موجود تھیں۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر