مقبول خبریں
مکس مارشل آرٹ کونسل اور چیریٹی آرگنائزیشن کے زیر اہتمام تقریب کا انعقاد
بریگزیٹ بحران :کنزرویٹو پارٹی کی تین خواتین ممبر کی آزاد گروپ میں شمولیت
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
میں روشنی سے اندھیرے میں بات کرتا ہوں!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
روس شام میں امریکی میزائلوں کے حملے کے لیے تیار رہے:امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ
واشنگٹن : امریکا کے صدر ٹرمپ نے روس پر صدر بشارالاسد کی حمایت کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ روس شام میں امریکی میزائلوں کے حملے کے لیے تیار رہے جبکہ روس کا کہنا ہے کہ وہ ان میزائلوں کو مار گرائے گا۔ جبکہ فرانس کے مطابق حملوں میں کیمیائی تنصیبات کو نشانہ بنایا جائے گا۔صدر ٹرمپ نے اپنی ٹوئٹ میں کہا ہے کہ روس تیار رہو میزائل آ رہے ہیں۔ ٹرمپ کی جانب سے ممکنہ اقدام شامی افواج کی جانب سے کیمیائی حملوں کے جواب میں کیا جاسکتا ہے۔ صدر ٹرمپ نے روس کی مذمت کی کہ وہ شامی صدربشارالاسد کی حمایت کر رہا ہے۔ روس نے کہا ہے کہ وہ شام کی جانب آنے والے تمام میزائلوں کو مار گرائے گا۔ روس نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نےغیرقانونی فوجی کارروائی کی تو وہ اس کا ذمہ دار ہو گا۔ جبکہ فرانسیسی صدر کا کہنا ہے کہ حملوں میں شامی حکومت کی کیمیائی تنصیبات کو ہدف بنایا جائے گا۔