مقبول خبریں
مسلم کانفرنس کے مرکزی راہنما راجہ یاسین کے اعزاز میں چوہدری محمد بشیر رٹوی اور ساتھیوں کا استقبالیہ
بیسٹ وے گروپ کے سربراہ سرانور پرویز کی جانب سے کمیونٹی رہنمائوں کے اعزاز میں استقبالیہ
نبوت بھی اﷲ کی عطا ہے اور صحابیت بھی، نبوت بھی ختم ہے اور صحابیت بھی: ڈاکٹر خالد محمود
شریف فیملی کو فوری ریلیف نہ مل سکا، جولائی کے آخر تک سماعت ملتوی
مقبوضہ کشمیر :بھارتی فوج نے نوجوان کا سر تن سے جدا کر دیا ،احتجاج،جھڑپیں
شیر خدا نے نبی پاک کی آواز پر لبیک کہہ کر اسلام سے محبت اور وفا کی عمدہ مثال قائم کی
پیپلزپارٹی ہی آئندہ انتخابات میں چاروں صوبوں میں اکثریت حاصل کریگی:میاں سلیم
مسئلہ کشمیر پرقوم کا نکتہ نظر اور قربانیاں رنگ لا رہی ہیں:جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت
نیا موسم تمہارا منتظر ہے۔۔۔۔۔۔۔۔
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان پریس کلب کے زیراہتمام میڈیا ورکرز تحریک سے برطانوی صحافیوں اور کمیونٹی کا اظہار یکجہتی
لندن:پاکستان کے میڈیا ورکرس کیلیئے چلائی گئی تحریک کی کامیابی پر ہم قائد صحافت افضل بٹ اور انکے ساتھیوں کو مبارکباد پیش کرتے ہیں، پاکستان پریس کلب یوکے نے اس تحریک میں شانہ بشانہ چل کے پاکستانی صحافی ساتھیوں کو یہ باور کرادیا ہے کہ انکی آواز اب صرف پاکستان نہیں بلکہ دنیا بھر میں سنی جائے گی ان خیالات کا اظہار پاکستان پریس کلب برطانیہ کے صدر ارشد رچیال نے پاکستان ہائی کمیشن کے باہر تحریک برائے حصول حقوق میڈیا ورکرز کی قیادت کرتے ہوئے کیا، اس پرامن احتجاج میں برطانیہ بھر سے درجنوں صحافیوں نے شرکت کی جبکہ کمیونٹی رہنمائوں نے میڈیا سے اپنی اپنی محبت اور یکجہتی کا اظہار کیا۔ سیکریٹری جنرل نوید سجاد چوہدری نے کہا کہ اس سے بڑا ظلم کیا ہوگا کہ معاشرے کو آگاہی دینے والے صحافی کو ہی اس طرح جان سے مار دیا جاتا ہے جیسے اس کا کوئی والی وارث نہ ہو، انہوں نے کہاسمبڑیال کے ذیشان بٹ کا محض یہ قصور تھا کہ اس نے اہل اقتدار کے ایک گماشتے کو بدعنوانی پر للکارا تھا اگر یہ جرم ہے تو ہم سب صحافی یہ جرم فرض سمجھ کے کرتے رہیں گے اور ہر ظالم جابر دھوکے باز اور فراڈئیے کو للکارتے رہیں گے سربازار ننگا کرتے رہیں گے چاہے ہمیں اسکی کوئی بھی قیمت ادا کرنی پڑے۔سابق صدر پاکستان پریس کلب برطانیہ مبین چوہدری نے کہا پاکستانی میڈیا ورکر ہرطرح کے کڑے موسم اور ہر تہوار میں عوامی خدمت کیلئے میدان عمل میں ہوتے ہیں، اپنی غمی خوشی اور خاندانوں کی ترجیحات کو پس پشت ڈالتے ہوئے قوم کی آگاہی کیلئے ہمیشہ سرگرم رہتے ہیں لیکن بدقسمتی کی بات یہ ہے کہ یہی میڈیا ورکران فرائض کی سرانجام دہی کے بدلے میں وہ حقوق حاصل نہیں کرپارہا جو بحیثیت انسان اس کو حاصل ہیں۔ مظاہرے سے فرینڈز آف پاکستان پریس کلب کے چیئرمین ناہید رندھاوا، کامریڈ مشتاق لاشاری، حبیب جان بلوچ، شاکر قریشی، افضل چوہدری، طارق چوہری و دیگر نے بھی خطاب کیا اور میڈیا ورکرز کو حقوق کی تحریک کو سراہا انکا کہنا تھامیڈیا ورکر کو دنیا بھر میں ترجیحی بنیادوں پر حقوق دیئے جاتے ہیں تاکہ خبر کا سفر رک نہ پائے جبکہ پاکستان میں خبر کے حصول کیلئے جان تک دائو پر لگادینے والے کو نہ تو تنخواہ وقت پر ملتی ہے اور نا ہی زندگی بھر اسکی تنخواہ میں قابل قدر اضافہ ہوپاتا ہے۔ سب سے بڑا المیہ یہ ہے کہ فرائض کی انجام دہی میں جان بھی گنوا دینے کا صلہ نہیںملتا۔ واضع رہے تحریک حقوق میڈیا ورکر وطن عزیز میں پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس، ایپنک، نیشنل پریس کلب سمیت تمام یونین آف جرنلسٹس کے تعاون سے شروع کی گئی ہے اوورسیز میں پاکستان پریس کلب برطانیہ اس تحریک میں شانہ بشانہ تھا۔ اس تحریک میں درج ذیل مطالبات رکھے گئے تھے۔ 1 میڈیا انڈسٹری میں کنٹریکٹ سسٹم کا خاتمہ کیا جائے 2 الیکٹرانک میڈیا کے ملازمین کیلئے قانون سازی کی جائے 3 آٹھواں ویج بورڈ تشکیل دیا جائے 4 صحافیوں کے جان و مال کو تحفظ دیا جائے مظاہرے کے دوران ہی اسلام آباد سے اطلاع موصول ہوئی کہ حکومت پاکستان نے صحافیوں کی اس تحریک میں پیش کردہ تمام مطالبات مان لیئے ہیں جس پر پاکستان پریس کلب برطانیہ کے مظاہرے کو اظہار تشکر میں تبدیل کردیا گیا۔ مظاہرے میں لندن کے علاوہ لوٹن، ہائی ویکمب، آکسفورڈ، برمنگھم، بریڈفورڈ، مانچسٹر اور شفیلڈ سے ورکنگ جرنلسٹس کی کثیر تعداد نے شرکت کی اور پاکستانی میڈیا ورکرز کے حقوق کیلئے شدید نعرے بازی کی۔