مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
دعا ہے خطےمیں ایسا موقع نہ آئے جب دو نیو کلیئر ریاستیں آپس میں متصادم ہوں:صدر آزاد کشمیر
برسلز ... یورپی پارلیمنٹ میں جاری ہفتہ کشمیر کے سلسلے میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے صدر آزاد کشمیر سردار یعقوب خان نے کہا ہے کہ یورپ ایک ایسی جگہ ہے جو کشمیریوں کی دوست ہے اور جہاں انسانی بنیادوں پر لوگوں کی آواز سنی جاتی ہے۔ جب کشمیر میں زلزلہ آیا تھا تو پوری دنیا سے لوگ ہماری مدد کیلئے آئے تھے یورپین یونین نے بھی اس حوالے سے شاندار کردار ادا کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت یہ سمجھتا ہے کہ کشمیریوں کی تحریک کو طاقت کے زور پر دبالے گا لیکن کشمیری1947ء کا وقت نہیں دھرانا چاہتے جب انہوں نے اپنا حق چھین لیا تھا۔ یورپی پارلیمنٹ میں جاری ہفتہ تقریبات کا انعقاد پارلیمنٹ میں پاکستان فرینڈز گروپ کے چیئرمین سجاد کریم ایم ای پی کر رہے ہیں۔ سیمینار سے ان کے علاوہ جین لیمبرٹ ایم ای پی، یورپین یونین کے لیے پاکستانی سفیر منور سعید بھٹی، مقبوضہ کشمیر کے معروف صحافی اور دانشور شجاعت بخاری، امریکہ سے آئے ہوئے وکیل ظہوروانی، آزاد کشمیر کی وزیر بہبودڈاکٹرفرزانہ یعقوب، کشمیری ایکسپرٹ لارا سخورمین، حریت کے ذمہ دار الطاف وانی، فاروق صدیقی،معروف کشمیری رہنما علی رضا سید اور ماریان لوکاس نے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ جبکہ مقبوضہ کشمیر سے محمد یسین ملک اور کشمیر کولیشن آف سول سوسائٹی کے پرویز امروز نے بھی ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کیا۔ صدر آزاد کشمیر سردار محمد یعقوب خان نے مزیدکہا ہے کہ کشمیری امن پسند قوم ہیں۔ ہم نے بھارتی لیڈرنہرو کی باتوں پر اعتبار کیا۔ لیکن وہ غلط نکلے، ہماری خواہش ہے کہ مسئلہ کشمیر پرامن انداز میں حل ہوسکے۔ بھارت اپنے لوگوں کو اور عالمی برادری کو بے وقوف بنارہا ہے جس کی مثال افضل گرو کا واقعہ ہے جس میں کہا گیا کہ وہ اس میں ملوث نہیں تھا لیکن اسے صرف بھارتی عوام کی تسلی کیلئے پھانسی دی گئی۔ بھارت نے دہشت گردی کے ہر معاملے میں پاکستان کو ملوث کرنے کی کوشش کی لیکن دنیا نے اسے تسلیم نہیں کیا۔ سردار محمد یعقوب خان نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ حریت کانفرنس کی تمام لیڈرشپ اس ایک نکاتی ایجنڈے پر متحد ہوچکی ہے کہ ہمیں انڈیا سے آزادی حاصل کرنی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے بزرگوں نے قرارداد الحاق پاکستان سری نگر میں پیش کی تھی اس لئے انڈیا کو یاد رکھنا چاہیئے کہ پاکستان پر بری نظر ڈالنے سے قبل اسے کشمیریوں سے نبردآزما ہونا پڑے گا۔ انہوں نے عالمی میڈیا کو دعوت دی کہ وہ آزاد کشمیر میں جب چاہے آئے لیکن اس بات کا نوٹس بھی لیا جائے کہ کیوں عالمی میڈیا مقبوضہ کشمیر نہیں جاسکتا۔ سردار محمد یعقوب خان نے وزیراعظم پاکستان کا دل کی انتہائی گہرائیوں سے شکریہ ادا کیا جنہوں نے کھل کر کشمیر پر بات کی جبکہ سابق صدر آصف علی زرداری اور انکی حکومت نے بھی ہمیشہ پاکستان کا موقف ڈٹ کر بیان کیا۔ انہوں نے دعا کی کہ خطے میں کبھی ایسا موقع نہ آئے جب دو نیو کلیئر ریاستیں آپس میں متصادم ہوں۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے شجاعت بخاری نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر وہی علاقہ ہے جسے یورپین پارلیمنٹ نے روئے زمین کی خوب صورت جیل قرار دیا تھا، لیکن اس اکتوبر میں جب یورپین ڈیلیگیشن مقبوضہ کشمیر آیا تو وہ صرف وزیراعلیٰ اور گورنر سے مل کر واپس چلا گیا۔ جوکہ انتہائی افسوس کی بات ہے۔ جے کے ایل ایف کے صدر یسین ملک نے کہا کہ ہم نے دنیا کے کہنے پر اپنے ہتھیار رکھ دیے تھے، تاکہ مسئلے کو پرامن انداز میں حل کرنے کی کوششیں کامیاب ہوسکیں لیکن ایسا نہیں ہوا بلکہ بھارتی فوج کے مظالم اسی طرح جاری ہیں۔ کیا لوگوں کی یہ خواہش ہے کہ ہم ہتھیار اٹھالیں۔ انہوں نے یورپین یونین سے درخواست کی کہ وہ صرف اس بات پر توجہ نہ دیں کہ ہندوستان کتنا بڑا تجارتی پارٹنر ہے بلکہ انسانی حقوق کے معاملے پر ہندوستان کی بھرپور مذمت بھی کریں۔ یورپی پارلیمنٹ میں ہفتہ کشمیر کے حوالے سے متعدد تقریبات کا انعقاد کیا جا رہا ہے جن کی نگرانی ممبر یورپی پارلیمنٹ سجاد کریم خود کر رہے ہیں جبکہ علی رضا سید چیئرمین کشمیر کونسل ای یو، راجہ نجابت حسین چیئرمین تحریک حق خودارادیت و دیگر رفقا انکی معاونت میں پیش پیش ہیں۔