مقبول خبریں
راچڈیل مساجد کونسل کی طرف سے مئیر کونسلر محمد زمان کی مئیر چیرٹیز کیلئے فنڈ ریزنگ ڈنر کا اہتمام
اوورسیز پاکستانیوں کے لئے خصوصی سیل بنایا جانا چاہئے: سلیم مانڈوی والا
مسئلہ کشمیر کو پر امن طریقے سے حل کیا جائے: برطانوی و یورپی ارکان پارلیمنٹ کا مطالبہ
برطانیہ میں آباد تارکین وطن کی مسئلہ کشمیر پر کاوشیں قابل تحسین ہیں:چوہدری محمد سرور
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
کشمیریوں کو ان کا حق دیئے بغیر خطے میں پائیدار امن کا حصول ممکن نہیں: راجہ نجابت حسین
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
برطانیہ میں مقیم کشمیری و پاکستانی 16مارچ کو بھارت کے خلاف مظاہرہ کریں گے: راجہ نجابت حسین
وہ بے خبر تھا سمندر کی بے نیازی سے!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
روس کا 23 برطانوی سفارتکاروں کو ایک ہفتے میں ملک چھوڑنے کا حکم
ماسکو: برطانیہ اور روس کے تعلقات میں کشیدگی مزید بڑھ گئی، ماسکو نے تئیس برطانوی سفارتکاروں کو ایک ہفتے کے اندر ملک چھوڑنے کا حکم دے دیا، اس معاملے پر گفت و شنید کے لیے برطانوی سفیر روسی وزارت خارجہ پہنچ گئے۔روسی سفارتکاروں کے خلاف تھریسامے کے اقدامات کے بعد ماسکو نے بھی 23 برطانوی سفارتکاروں کو ایک ہفتے کے اندر ملک چھوڑنے کا حکم دے دیا۔ ماسکو میں برطانوی سفیر روسی وزارت خارجہ پہنچ گئے اور معاملے کو گفت و شنید سے حل کرنے کی کوششیں شروع کر دیں۔ادھر پیرس میں جرمن چانسلر انگیلا مرکل اور فرانسیسی صدر میکرون نے بھی سر جوڑ لیے، کشیدگی اس وقت شروع ہوئی تھی جب لندن میں ایک روسی ڈبل ایجنٹ اوراس کی بیٹی پر زہریلے مواد سے قاتلانہ حملہ ہوا تھا جس کا الزام برطانیہ براہ راست پیوٹن پر لگا رہا ہے۔