مقبول خبریں
راچڈیل، ساہیوال جیسے شہروں کے رشتے کو مثالی بنایا جائیگا: ممبر پنجاب اسمبلی ندیم کامران
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ایجنٹ کو زہر دینے کا الزام، برطانیہ کا روسی سفارتکاروں کو نکالنے کا فیصلہ
لندن: برطانوی وزیرِ اعظم نے روسی خفیہ ادارے کے سابق افسر اور ان کی بیٹی کو زہر دینے پر روس کے 23 سفارت کاروں کو ملک سے نکالنے کا اعلان کیا ہے۔روسی سفارتکاروں کو ملک چھوڑنے کے لیے ایک ہفتہ دیا گیا ہے اور یہ سفارتکار وہ انٹیلی جنس افسر ہیں جن کی شناخت مخفی رکھی گئی۔ تاہم دوسری جانب روس نے سابق انٹیلی جنس افسر 66 سالہ سرگئی اور ان کی 33 سالہ بیٹی یولیا کو زہر دینے میں ملوث ہونے کی تردید کی ہے۔یاد رہے کہ روس کو برطانیہ کی جانب سے ایک سابق ڈبل ایجنٹ پر مبینہ طور پر قاتلانہ حملے کی وضاحت کے لیے منگل تک کا وقت دیا تھا۔ وزیرِ اعظم ٹریزا مے نے پارلیمان کو بتایا تھا کہ عین ممکن ہے کہ برطانیہ میں سابق روسی ایجنٹ اور ان کی بیٹی کو روس میں تیار کردہ اعصاب کو متاثر کرنے والی کیمیائی مواد دیا گیا ہو۔ٹریزا مے نے روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروو کو برطانیہ کا دورہ کرنے کی دعوت بھی منسوخ کر دی ہے۔ اس کے علاوہ اعلان کیا گیا ہے کہ برطانوی شاہی خاندان روس میں ہونے والے فیفا ورلڈ کپ کی تقریب میں شرکت نہیں کرے گا۔ دوسری جانب روس نے برطانوی اقدام کی مذمت قرار دیتے ہوئے اسے بلا جواز قرار دیا ہے۔ خیال رہے کہ برطانیہ کے شہر سیلسبری کے سٹی سینٹر میں روس کے سابق خفیہ ایجنٹ سرگئی اور ان کی بیٹی کو نڈھال حالت میں پایا گیا تھا، دونوں کی حالت نازک ہے جبکہ ان دونوں کی دیکھ بھال کرنے والے سارجنٹ نک بیلی بھی بیمار ہو گئے ہیں۔