مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ایران،ہندوستان معاہدہ سے گوادر کی بندر گاہ کو نقصان پہنچ سکتا ہے:ڈاکٹر مسفر
برنلے:جموں کشمیر لبریشن لیگ برطانیہ و یورپ گزشتہ ہفتے ایران اور ہندوستان کے درمیان چاہ بہار بندر گاہ کو اٹھارہ ماہ کیلئے لیز پر دیئے جانے کو انتہائی تشویش کی نگاہ سے دیکھتی ہے،ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر مسفر حسن صدر لبریشن لیگ برطانیہ و یورپ نے کیا،انہوں نے کہا کہ ایران اور ہندوستان کے درمیان ہونے والے حالیہ معاہدے جس میں ایرانی حکومت نے چاہ بہار کی بندر گاہ اٹھارہ ماہ کے لئے لیز پر ہندوستان کو دے دیا ہے اس سے گوادر کی بندر گاہ کے مستقبل کو نقصان پہنچ سکتا ہے،ڈاکٹر مسفر نے کہا کہ پاکستان کی موجودہ سیاسی افراتفری کی صورتحال سے ہندوستان کے حکمران بھرپور فائدہ اٹھا رہے ہیں اور حالیہ ایران ہندوستان معاہدہ جس میں افغانستان بھی ان ممالک کے ساتھ شامل ہے اس حکومت پاکستان خطے میں تنہا ہوتی نظر آ رہی ہے جو جموں و کشمیر کے لوگوں کے لئے انتہائی تشویش ناک بات ہے،انہوں نے کہا کہ اس صورتحال سے بچنے کیلئے اور کشمیریوں کی تحریک کو تقویت دینے کیلئے نئی حکمت عملی کی ضرورت ہے جس میں مظفر آباد حکومت کو با اختیار بنانے کا عمل بنیادی نقطہ ہو گا،اس کے علاوہ پر امن سیاسی جدو جہد کو آگے بڑھانے کیلئے اقدامات کی ضرورت ہے،اگر پاکستان کے حکمرانوں نے حالات کا نذاکت کو نہ سمجھا تو پھر ملک اور قوم اور کشمیری عوام کیلئے بھی انتہائی مشکلات درپیش ہونے کے اندیشے نظر آ رہے ہیں۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر