مقبول خبریں
پاکستانی کمیونٹی سنٹر اولڈہم میں بیڈمنٹن ٹورنامنٹ کا انعقاد، برطانیہ بھر سے 20 ٹیموں کی شرکت
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
عمران خان مارگریٹ اور میں
عمران خان کی تسیری شادی پر تبصرے، تجزیئے، اور خبریں جاری ہیں سوشل میڈیا پر بڑی دلچسپ جگت بازی بھی ہو رہی ہے پرنٹ میڈیا تو کچھ سماجی، سیاسی اور مذہبی اقدار کی زمہ داری نبھا رہا ہے لیکن الیکٹرونک اور سوشل میڈیا شتر بے مہار کی طرح جو چاہے کر گزرے یہ کسی کی بھی پکڑ دھکڑ میں نہیں ہے عمران خان کی تیسری شادی پر میں نے اپنے فیس بک پر اپنے چاہنے والے ہزاروں دوستوں کے لئے بس اتنا لکھا ’’عمران خان کی شادی اورمیری شادی میں قدر مشترک ہے کہ عمران خان نے شادی سے پہلے بیوی کی بیعیت کرلی تھی جبکہ میں نے شادی کے بعد بیعت کی تھی آپ سب جو چاہئیں کرلیں کامیابی کا راز زن مریدی میں ہی ہے‘‘پاکستان سے ایک دوست نے فون کیا عمران خان کی شادی کا مزہ نہیں آیا میں نے وجہ پوچھی اس نے جواب دیا بشریٰ بھابھی حجاب میں ہے ہم دیکھ نہیں سکتے مجھے تعجب ہوا عجیب لوگ ہیں جمائما خان سے جب عمران نے شادی کی تو جمائما کو لوگوں نے یہودی کہا اور عمران کو یہودیوں کا ایجنٹ کے القابات سے نوازا گیا جمائما سے پہلے سیتا وائٹ پھر ریحام خان اور اب بشریٰ سے شادی عمران خان کے سیاسی کیریئر میں مخالفین کے لئے جہاں ان پر تنقید کا باعث بننے کے اسباب پیدا کرتی ہے وہاں حتیٰ کہ انصافیوں سمیت اس کے مداحوں کے لئے بھی اس کی شہرت اور عزت میں قدرے کمی واقع ہونے کا باعث بنے گی اگرچہ شادی ایک نجی معاملہ ہے لیکن قومی لیڈر اور قومی ہیرو کو رول ماڈل کا کردار ادا کرنا ہوتا ہے پھر مغربی معاشرے اور ہمارے کنزرویٹو معاشرے کی اقدار مختلف ہیں عمران کے کردار اور سیاست سےتو کلی طور پر کسی بھی بھی فرد کے لئے اختلاف کرنے کے باوجود اسے یہ ماننا پڑتا ہے کہ عمران دنیا کا وہ واحد شخص ہے جس کے چاہنے والے ان ممالک میں بھی پائے جاتے ہیں جہاں کرکٹ بالکل نہیں کھیلی جاتی پیپلز پارٹی کے گزشتہ دور حکرانی میں لندن میں ایک تقریب کے دوران لطیف کھوسہ پنجاب کے گورنر کے طور پر مہمان خصوصی کی حثیت سے انگریزی میں اپنا طویل خطاب فرما رہے تھے اور آصف علی زرداری کے قصیدے پڑھ رہے تھے مہمانوں میں پاکستانیوں سمیت انگریر بھی موجود تھے خطاب ختم ہوا تو میں نے برابر میں بیٹھی عمران خان کی ایک دیوانی کرسٹینا بیکر کو مخاطب کر کے کہا ہے گورنر لطیف کھوسہ نے اچھا خطاب کیا ہے کرسٹینا بیکر آگ بگولا ہو گئی اس نے برجستہ جواب میں کہا’’اتنے کرپٹ لوگ ہیں یہ پورا پاکستان کھا گئے ‘‘تم انہیں اچھا کیسے ک سکتے ہو؟اسکی بات سن کر مجھے احساس ہوا کہ تحریک انصاف کا جادو سر چڑھ کر بول رہا ہے. کرسٹینا بیکر جرمن شہری ہے اور MTV کی سابقہ میزبان اینکر سے92 کے ورلڈ کپ کے بعد اس کے ملاقات عمران خان سے ہوئی وہ شوکت خانم اسپتال کی فنڈ ریزنگ کے لئے پاکستان چلی گئی جرمن اخبارات اور میڈیا نے اس کے عمران خان کے ساتھ آفیرز کی خبریں شائع کیں اور بالآخر کرسٹینا نے MTV چھوڑ دیا اور وہ مسلمان ہوگی اس کی ایک مشہور کتاب یے’’MTV TO MECCA‘‘عمران خان نے جمائما سے شادی کی تو کرسٹینا بیکر نے بھی کسی مسلمان سے شادی کرلی لیکن جس طرح عمران خان اور جمائما کی شادی ناکام ہوگئی ویسے ہی کرسٹینا کی بھی شادی ناکام ہوگئی اب کرسٹینا اسلام کے سفیر کے طور پر جانی اور پہچانی جاتی ہے لیکن اسے مسلمان کرنے میں عمران خان کا بڑا عمل دخل ہے لندن میں ہمارے دوست عارف انیس ملک نے حالیہ دنوں میں اپنے ایک کالم میں انکشاف کیا کہ کرسٹینا بیکر آج بھی عمران خان کی دیوانی ہے لیکن شاید وہ اب وہ مایوس ہو چکی ہے کہ وہ کبھی پاکستان کی فرسٹ لیڈی نہیں بن سکتی،عمران خان کی پے درپے شادیوں کی ناکامیوں کے بعد میں نے سوچا اب انہیں میں ایک مشورہ دے دوں عمران خان شاید میرے مشورے پر عملدرآمد نہ کریں چلو اسی بہانے دوسرے دوستوں کا بھلا ہوسکتا ہے اور وہ اپنی کامیاب ازدواجی زندگی بسر کر سکیں انگلینڈ میں میری ملاقات ایک دن 78 سالہ خاتون سے دوران تیراکی ہوئی جو بغیر بریک اور ٹھہرے لگاتار تیرتی جارہی تھی اگرچہ میں بھی تیراک تھا لیکن زیادہ سے زیادہ آدھا گھنٹہ بغیر وقفے کے تیر سکتا تھا مجھے لگا کہ یہ خاتون بہت عمر رسیدہ ہیں لیکن مسلسل تیراکی سے میں بہت متاثر بھی ہوا اور ساتھ میں جیلس بھی تھا کہ میری تو سانسیں پھول رہی ہیں لیکن یہ بوڑھی عورت ہے کہ رکنے کا نام نہیں لیتی میرا تجسس بڑھتا گیا آخر میں نے اس کے رکنے کا انتظار کیا بالآخر وہ عورت رکی مجھے مخاطب ہوکر خوش گوار لہجے میں بولی ہیلو ہینڈسم تم مجھے مسلسل گھور کیوں رہے ہو، میری تو شادی ہو چکی ہے،میں نے جواب میں کہا کہ معافی چاہتا ہوں مگر میرا جوانی میں سانس ٹوٹ رہا ہے اور آپ مسلسل تیرتی جا رہی ہیں؟ عورت کہنے لگی میں 78 سال کی ہوں 55 سال سے مسلسل پیراکی کررہی ہوں ،پھر میں نے اس دلچسپ عورت سے آہستہ آہستہ بہت سے سوال کیے بعض بتانے کے قابل نہیں لیکن جو بتانے اور دوستوں کے یاد رکھنے کے لئے ہیں وہ یہ کہ اس عورت کو کوئی مرض 78 سال کی عمر میں لاحق نہیں تھا اس کی بڑی وجہ اس کی مسلسل تیراکی کی عادت تھی وہ عورت شادی شدہ تھی جو 60 سال سے ایک ہی خاوند کے ساتھ رہ رہی تھی جب میں نے اس سے یہ پوچھا تمہارے شوہر اور تمہارے درمیان 60 سال کامیاب ازدواجی زندگی کا راز کیا ہے تو وہ عورت کہنے لگی ،میرے شوہر کی ایک ادا مجھے سب سے زیادہ پسند ہے اس کی بنیاد پر اسی شوہر کے ساتھ میں نے ساٹھ سال زندگی ہنسی خوشی گزار دی کہ وہ مجھے بار بار یہ نہیں کہتا کہ اسے مجھ سے کتنی محبت ہے بلکہ اس کے بدلے جب بھی میں کوئی بات کرتی ہوں تو وہ یہ جواب دیتا ہے، ہاں، جان من، تم بالکل ٹھیک کہ رہی ہو. بس اسی بات پر ایک ہی شوہر کے ساتھ 60 سال گزر گئے اگر تم جان کی امان چاہتے ہو تو بیوی سے کبھی اختلاف مت کرو بلکہ ایک ہی جواب یاد رکھو بیگم تم درست کہتی ہو نہ جھگڑا ہو گا نہ علیحدگی نہ بیگم میکے جائے گی نہ ساس کو کچھ کہنے کا موقع ملے گا مارگریٹ اور میری ملاقاتیں تیراکی کے دوران اکثر ہوتی رہیں میں نے مارگریٹ کی ایک نصحیت کو تو یاد رکھا ہوا ہے کہ بیگم تم درست فرما رہی ہو لیکن اب میں تیراکی کرنے باقاعدگی سے نہیں جا رہا ہوں میری آخری ملاقات مارگریٹ سے 2001 میں ہوئی تھی اب جبکہ میں اپنی شادی کی اس سال سلور جوبلی منا رہا ہوں مجھے مارگریٹ بہت یاد آرہی ہے مجھے مارگریٹ نہیں مل رہی بہت ڈھونڈا لیکن اس کی نصحیت میرے بہت کام آئی دوستو سب کچھ کرو لیکن بیگم کو ہمیشہ کہو تم ٹھیک کہتی ہو اسی کو کامیابی کی کنجی سمجھوویسے بھی مرید کا کام ہے پیر کی ہاں میں ہاں ملائے دوسرے لفظوں میں سرنڈر کر جاو وگرنہ آجکل کے دور میں تم ہی صرف نقصان میں رہو گے،مولانا حضرات شاید بظاہر عورت کی بیعت کی اجازت نہیں دیں گے کہ اسلام میں تو عورت کی بیعت ثابت نہیں ہے مرد حضرات شاید یہ سمجھیں زن مریدی بھی مرد کی مردانگی کے شایان شان نہیں ہے لیکن عورت ماں ہے بہن ہے بیٹی ہے کوئی دوسرا اگر اپنی ماں بہن اور بیٹی کو برے طریقے سے پیش آئے تو مرمٹنے کا دل کرتا ہے اور بہت تکلیف پہنچتی ہے لیکن جب وہ بہو اور بیوی بنتی ہے تو اکثر مردوں اور سسرالیوں کو جلاد بنتے دیر نہیں لگتی لیکن مغربی معاشرے میں عورت مرد پر اور مرد عورت پر تشدد نہیں کر سکتا یہ امر افسوسناک ہے کہ ہمارے مستقبل کے دو ہارٹ فیورٹ متوقع وزرے آعظم دو ایسے گلیمرس کردار ہیں جن میں شہباز شریف اور عمران خان شامل ہیں شہبازشریف نے بھی کوئی کم گل نہیں کھلائے ہوئے ہیں انکی سابقہ بیویاں نصرت شہباز، تہمینہ درانی،عالیہ اور کلثوم شہباز شامل ہیں آخر میں بس اتنا کہنا چاہتا ہوں کہ عمران خان کو نئی(تیسری )شادی (ڈیکلیئرڈ) کی مبارک ہو اور دعا ہے کہ بشری پیرنی جی کے تبرکات سے عمران خان کی وزیراعظم بننے کی دیرینہ خواہش پوری ہو جائے۔(آمین )۔