مقبول خبریں
پاکستان میں صاف پانی کی سہولت کو ممکن بنانے کیلئے مختلف منصوبوں پر کام کرونگی:زارہ دین
پیپلزپارٹی کے رہنما ندیم اصغر کائرہ کی پریس کانفرنس ،صحافیوں کے سوالات کے جوابات دیئے
واجد خان ایم ای پی کا آزاد کشمیر سے آئے حریت کانفرنس کے رہنمائوں کے اعزاز میں عشائیہ
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
جموں و کشمیر تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے زیر اہتمام پہلی کشمیر کلچرل نمائش کا اہتمام
دسمبر بے رحم اتنا نہیں تھا!!!!!!!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
میں نہیں مان سکتا کوئی ڈکیت پارٹی صدر بن کر حکومت کرے:چیف جسٹس
اسلام آباد:الیکشن ایکٹ کے خلاف درخواستوں کی سماعت، میں نہیں مان سکتا کہ کوئی ڈکیت پارٹی صدر بن کر حکومت کرے، کیا توہین عدالت کا مرتکب پارٹی صدر بن سکتا ہے؟ پارلیمنٹ کو بنیادی ڈھانچے سے متصادم قانون بنانے کا اختیار نہیں، چیف جسٹس کے ریمارکس۔سپریم کورٹ میں الیکشن ایکٹ 2017ء کیس کی سماعت ہوئی جس میں 3 رکنی بینچ کے گرما گرم ریمارکس بھی سامنے آئے۔ چیف جسٹس بولے، اللہ نہ کرے کہ کوئی چور اچکا پارٹی صدر بن جائے، نہیں مان سکتا کہ کوئی ڈکیت پارٹی صدر بن کر حکومت کرے، ہمارے وزیر اعظم کہتے ہیں کہ ان کے وزیر اعظم وہی ہیں، نااہل شخص ارکان پارلیمنٹ سے وہ کرائے گا جو وہ خود نہیں کر سکتا۔جسٹس اعجاز الاحسن بولے، ایک مثال دے دیں کہ نااہل شخص نے پارٹی ٹکٹ تقسیم کئے ہوں؟ انتخابی اصلاحات ایکٹ کی آئین کے ساتھ وفاداری نہیں لگتی، اداروں پر حملہ کرنے پر آرٹیکل 6 کے تحت کارروائی ہو سکتی ہے۔