مقبول خبریں
برطانوی معاشرے میں رہتے ہوئے تمام تہوار میں حصہ لینا چاہئے: افضل خان
سپینش شہریت کے حامل سائنسدانوں کی قدرتی آفات پر ریسرچ
پاکستان میں فٹبال کے فروغ کیلئے انٹرنیشنل سوکا فیڈریشن کا قیام، ٹرنک والا فیملی کو خراج تحسین
چیئر مین پی ٹی آئی عمران خان تیسری بار دلہا بن گئے، بشریٰ بی بی سے نکاح ہو گیا
بھارتی ریاستی دہشتگردی کیخلاف مقبوضہ کشمیر میں ہڑتال، تعلیمی ادارے بند
کشمیر میں جاری انسانی حقوق کی پامالیوں کو رکوانے کے سلسلہ میں پروگرام کا انعقاد
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
راجہ نجابت اور ان کی ٹیم کامسئلہ کشمیرپر متحرک کردار قابل ستائش ہے: سٹوورٹ اینڈریو
کیا یورپ ٹوٹ رہا ہے ؟
پکچرگیلری
Advertisement
اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل کے زیراہتمام یوم یکجہتی کشمیر پر کار ریلی کا انعقاد
میڈن ہیڈ :کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے برطانیہ کی تاریخ میں پہلی بار کشمیر پر بھارت کے جابرانہ قبضہ کے خلاف پانچ فروری کو کار ریلی نکالی گئی۔ کار ریلی کا اہتمام اوورسیز پاکستانیز ویلفیر کونسل برطانیہ نے کیا۔ مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر بڑے پیمانے پر مظالم اور اور انسانی حقوق کی بدترین پامالیوں کو رکوانے اور بھارتی جارحیت کو بے نقاب کرنے کی غرض سے5 فروری کو یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر برطانوی وزیراعظم ٹریسا مے کے حلقہ انتخاب "میڈن ہیڈ " سے انڈین ہائی کمیشن لندن اور بعد میں پارلیمنٹ ہاؤس تک بڑٹش پاکستانی اور کشمیریوں نے کار ریلی نکالی۔ کار ریلی دن ۱۲بجے شروع ہوئی اور دوپہر کو ۲بجے ۳۱ میل کا فاصلہ طے کرتے ہوئے لندن پہنچی۔ لارڈ نذیر احمد اور دیگر راہنماوں نےانڈین ہائی کمیشن کے سامنے OPWC کی کار ریلی کا استقبال کیا۔ لارڈ نذیر احمد اور چئرمین او۰پی۰ڈبلیو۰سی نعیم عباسی نے انڈین ہائی کمیشن کے باہر ریلی شرکاء سے خطاب کیا۔ جبکہ OPWC کے عہدیداران نے “کشمیر بنے گا پاکستان” “مودی سرکار ۔۔دہشت گرد”“ہم چھین کہ لیں گے آزادی”“ھےحق ہمارا آزادی”پاکستان آرمی زندہ باد ““کی زبردست نعرہ بازی کار ریلی کے روٹ میں موٹر وے M4اور A4 بھی شامل تھا۔ پُر امن کار ریلی میں ۵۰ سے ذاہد گاڑیاں شامل تھیں۔ وزیراعظم ٹریسا مے کے حلقہ انتخاب سے کار ریلی نکالنے کے انتظامات اورسیزز پاکستانیز ویلفئیر کونسل تنظیم نے کیے تھے۔ تنطیم کے چیئرمین نعیم عباسی ،حاجی عابد حسین،پروفیسر مسعود ہزاروی۔اسلم ڈوگر۔ ملک امیر کابل۔ ،چوہدری آفتاب ۔میاں سلیم ،امجد امین بوبی۔ امجد تارڑ۔ چوہدری طارق۔ شوکت حیات۔ ابرار میر مشتاق لاشاری چوہدری سفیر۔ منصور کیانی۔ صغیر اعظم۔چوہدری رزاق۔عرفان کیانی۔ چوہدری ساجد علی۔ظفر انصاری۔ عثمان خان۔ چوہدری نجیب۔ ظہور حسین۔ راجہ احسان۔ شبیر رٹوی نجابت بھٹی۔ چوہدری شبیر۔ظفر چوہدری۔ حاجی ظہور حسین۔ عمار مصطفی۔ زاہد ساہی۔ نثار چوہدری۔ راجہ اصغر۔ قمر ڈوگر۔ ساجد حسین۔ نصیر چوہدری۔ دلپزیر چوہدری۔ اکمل ڈوگر۔ عقیل چوہدری۔ چوہدری سیف۔ ابرار چوہدری۔ نعیم اللہ خان۔ کلیم اللہ خان۔ غلام صدیق۔ ذاہد ظفر۔ راجہ شمریز۔ ارشد عطاء۔ شفقات چوہدری۔ رضوان خان۔فیاضادریس۔ چوہدری محمود۔ چوہدری اللہ دتہ۔ چوہدری شاہجہان۔ سجاد بخاری۔ دیگر عہدیداران برطانیہ کے مختلف شہروں میں جاکر اپنی رابطہ مہم جاری رکھے ہوئے ہیں اسی تناظر انہوں نے آکسفورڈ یونیورسٹی کے عقب ایک میٹنگ میں خصوصی طور پر اسلم ڈوگر ،رانا شاہد علی۔ عثمان خان۔ ذاہد ساہی۔ ظہور احمد۔ ںاصر رانا۔ وقاص خان۔ سرفراز نواز۔نورین خان۔ اور دیگر رہنما پُر امن کار ریلی میں شریک ہوے۔پارلیمنٹ ہاؤس پہنچنے کے بعد کار ریلی اختتام پذیر ہوئی۔