مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
کیوبا: سابق انقلابی رہنما فیدل کاسترو کے بیٹے اینجل کاسترو نے خود کشی کر لی
ہوانا: 68 سالہ اینجل کاسترو ڈپریشن کا شکار تھے،دارالحکومت ہوانا میں مردہ پائے گئے،سرکاری میڈیاکیوبا کے سابق انقلابی رہنما فیدل کاسترو کے بیٹے اینجل کاسترو نےخود کشی کر لی ۔سرکاری میڈیا کے مطابق 68 سالہ اینجل کاسترو دارالحکومت ہوانا میں مردہ پائے گئے اور خیال ظاہر کیا جا رہا ہے کہ وہ ڈپریشن کا شکار تھے۔اینجل کاسترو، فیدل کاسترو کے پہلے بیٹے خاندانی مشہابت کی وجہ سے ’فیدلتو‘ یا ’لٹل فیدل‘ کے نام سے مشہور تھے۔وہ ایک جوہری طبیعیات دان تھے اور انھوں نے سابق سویت یونین سے تربیت حاصل کی تھی۔ کیوبا کے سرکاری اخبار گرانما کے مطابق ڈاکٹروں کا ایک گروپ گذشتہ کئی مہینوں سے اینجل کاسترو کا شدید ڈپریشن کی وجہ سے علاج کر رہا تھا۔سرکاری ٹی وی کے مطابق اینجل کاسترو حالیہ مہینوں میں ایک مقامی ہسپتال میں زیرِ علاج تھے۔اپنی موت کے وقت وہ کیوبن کونسل آف سٹیٹ میں سائنسی مشیر تھے۔ انھوں نے کیوبا کی اکیڈمی آف سائنسز کے نائب صدر کی حیثیت سے خدمات سر انجام دیں۔انھوں نے سنہ 1980 سے 1992 کے دوران اپنے ملک کے جوہری پروگرام کی سربراہی کی۔اینجل کاسترو اپنے والد کی مرتا ڈیاز بالارٹ کے ساتھ پہلی مختصر شادی کے دوران پیدا ہوئے تھے۔ مرتا ڈیاز بالارٹ ایک انقلابی سیاستدان کی بیٹی تھیں۔ اینجل کاسترو کی والدہ کا خاندان امریکی ریاست فلوریڈا منتقل ہو گیا جہاں وہ کاسترو مخالف کمیونٹی میں نمایاں حیثیت اختیار کر گیا۔ان کے ایک رشتہ دار سے متعلق منعقد ہونے والے اجلا س میں اپنے ملک کی نمائندگی کی۔ کیوبا کے ذرائع ابلاغ کے مطابق اینجنل کاسترو کا خاندان ان کی آخری رسومات کی منصوبہ بندی کرے گا تاہم اس بارے میں مزید تفصیل فراہم نہیں کی گئی۔