مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس، امن کیلئے افغانستان سے تعاون جاری رکھنے کا اعلان
اسلام آباد: قومی سلامتی کمیٹی نے کابل میں دہشت گردی کے حالیہ واقعات کی شدید مذمت کی ہے۔ کمیٹی نے کہا ہے کہ دھماکوں پر افغان حکومت کا ردعمل غلط معلومات پر مبنی تھا۔ مشکلات کے باوجود افغان حکومت کے ساتھ امن کے لیے تعاون جاری رہے گا۔وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی کے زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی، تینوں مسلح افواج کے سربراہان اور وفاقی وزرا نے شرکت کی۔ اجلاس میں کابل میں دہشت گردی کے حالیہ واقعات کی شدید مذمت کرتے ہوئے پاک افغان سرحد پر باڑ کو مشترکہ مفاد قرار دیا گیا۔کمیٹی نے کہا کہ حکومت اور پاکستانی عوام دکھ کی اس گھڑی میں افغان عوام کے ساتھ کھڑے ہیں۔ دھماکوں پر افغان حکومت کا ردعمل غلط معلومات پر مبنی تھا۔ کچھ غیر ملکی عناصر نے دونوں ممالک میں غلط فہمیاں پیدا کیں۔ پاکستان مشکلات کے باوجود افغان حکومت کے ساتھ امن اور خطے میں سلامتی کے لیے اپنا کردار جاری رکھے گا۔قومی سلامتی کمیٹی نے کہا کہ پاکستان کا اعلیٰ سطح کا وفد شیڈول کے مطابق ہفتے کو افغانستان کا دورہ کرے گا۔ افغانستان کو سرحد پر باڑ لگانے کے پاکستانی اقدام کی حمایت کرنی چاہیے۔ کمیٹی نے افغانستان کے ساتھ سرحدی انتظامات کے حوالے سے اقدامات پر بھی اطمینان کا اظہار کیا۔