مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
چوہدری بشیر رٹوی کی پی پی پی راہنما نوشین عمر سے ملاقات،مسئلہ کشمیر بارے خصوصی گفتگو
مانچسٹر:برطانیہ میں رہتے ہوئے مثبت کشمیری ہماری اولین ذمہ داری ہےکہ سیاسی وابستگی سے بالا تر ہو کر مسئلہ کشمیر بارے کردار ادا کرنے کیلئے اتحاد و اتفاق اور یکجہتی کا عملی مظاہرہ کر کے ثابت کرنا ہو گا کہ اپنے پیدائشی حق خود ارادیت کے لئے یک نکاتی ایجنڈے پر ذاتی مفادات کو بالا تر رکھتے ہوئے کام کریں،تحریک آزادی کشمیر اس وقت انتہائی نازک ترین اور فیصلہ کن موڑ کی جانب گامزن ہے اور اگر اس میں ذرا بھر بھی کوتاہی کی گئی تو پھر شاید منزل کا حصول ایک دفعہ پھر سرد خانے کی ذینت نہ بن جائے،یہ باتیں مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری محمد بشیر رٹوی نے پاکستان پیپلز پارٹی برطانیہ خواتین ونگ کی جنرل سیکرٹری اور خواتین ایکشن کمیٹی کی رکن نوشین عمر سے ایک خصوصی ملاقات کے موقع پر برملا اظہار کرتے ہوئے کیں،انہوں نے مزید کہا کہ برطانوی معاشرے کا شہری ہونے کے ناطے ہمیں اپنی رائے،جذبات و احساسات کا اظہار کرنے میں مکمل آزادی ہے ہمیں برطانیہ کی حکومت اور دیگر سیاسی جماعتوں کے راہنمائوں،انسانی حقوق کی علمبردار تنظیموں سے رابطہ کر کے مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں پر بھارتی سکیورٹی اداروں کی جانب سے بد ترین انتہائی وحشیانہ ظلم و ستم بارے مزید آگاہی دیکر انہیں اس بات پر قائل کرنا ہو گا کہ وہ بھارتی سرکار پر دبائو ڈال کر دہشت گردانہ کارروائیاں بند کروائیں اس سلسلے میں خواتین کا کردار مرکزی حیثیت کا حامل ہے،اس موقع پر نوشین عمر نے انہیں اپنی مکمل حمایت کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ وہ اس سلسلے میں اپنا بھرپور کردار ادا کرنے کیلئے تمام تر موجودوسائل کا بھرپور استعمال کریں گی اس کیلئے وہ جلد مختلف تنظیموں و سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والی خواتین سے رابطہ کریں گی اور انہیں مسئلہ کشمیر پر حمایت کیلئے قائل کریں گی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر