مقبول خبریں
راچڈیل کیسلمئیرسنٹر میں کمیونٹی کو صحت مند رہنے،حفاظتی تدابیر بارے آگاہی ورکشاپ کا انعقاد
یورپی پارلیمنٹ میں قائم ’’فرینڈز آف کشمیر گروپ‘‘ کی تنظیم سازی کردی گئی
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
ہم نے سچ کو دیکھا ہے جھوٹ کے جھروکوں سے!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پاکستان میں قائم مقدمات کی برطانوی سرزمین پر گونج، نقصان کس کا، فائدہ کون اٹھائے گا ؟
پینڈل ... برطانوی وزیر اعظم کی رہائش گاہ ملک میں بسنے والی تمام قومیتوں، مذاہب اور رنگ و نسل کے افراد کیلئے یکساں طور پر قابل احترام ہے اسی طرح دس ڈائوننگ سٹریٹ میں بھی اہم تہواروں پر تمام مذاہب کے لوگوں کو مدعو کرکے انہیں پذیرائی دی جاتی ہے۔ افریقن، انڈین اور عرب لوگ باالعموم ایسی تقریبات کو اپنے آبائی وطن کیلئے اثاثہ سمجھتے ہیں جبکہ کچھ ممالک ایسے بھی ہیں جہاں کے لوگ ان تقریبات میں شرکت کرنے والوں پر نظر رکھتے ہیں اور موقع ملنے پر کوئی اسکینڈل کھڑا کر دیتے ہیں۔ ماضی میں ایسی ہی ایک انتہائی حساس جگہ فارن آفس میں مسلم لیگ ن برطانیہ کے سینیئر نائب صدر ناصر بٹ کے جانے اور وزیر داخلہ ہوم سیکریٹری سے ملاقات کو ایشو بنایا گیا اور اب پینڈل سے لیبر پارٹی چھوڑ کر حکمران توری پارٹی میں شامل ہونے والے علاقے کے ہردلعزیز رہنما کونسلر عبدالعزیز کی ڈیوڈ کیمرون سے ملاقات کو ایشو بنایا جا رہا ہے۔ برطانوی اخبار کے مطابق برٹش پارلیمنٹ کے سیشن میں ایک ایم پی نے وزیر اعظم سے سوال کیا کہ وہ پاکستان میں بہیمانہ اقدام میں ملوث ایک شخص (کونسلر عبدالعزیز) سے کیوں ملے؟ ڈیوڈ کیمرون سے سوال میں مڈلزبرا ساوٴتھ اینڈ ایسٹ کلیولینڈ سے لیبر ایم پی ٹام بلنک سوپ نے کہا کہ گزشتہ ماہ ٹوری کونسلر عبدالعزیز 10 ڈاوٴننگ کی عید ملن پارٹی میں مدعو تھا۔ اس شخص کے پاکستان میں بہیمانہ قتل کے سلسلے میں وارنٹ جاری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس شخص سے ہاتھ ملانے اور 10ڈاوٴننگ میں تصویر کھنچوانے کے بعد کیا آپ سوچیں گے کہ اس جینٹل مین کو پاکستان واپس بھیجنا چاہئے تاکہ وہ انصاف کا سامنا کرے؟ وزیر اعظم نے تو انہیں یقین دہانی کرا دی کہ وہ چھان بین کے بعد اس کا جواب دیں گے لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کونسلر عبدالعزیز کے سیاسی مخالفین کون ہیں جو انہیں نقصان پہنچانے کے درپے ہیں کیونکہ ان کے قریبی ذرائع نے کشمیر لنک لندن کو بتایا کہ یہ بات سراسر جھوٹ ہے اور انہوں نے پاکستان میں کوئی ایسی حرکت نہیں کی جو قابل تعزیر ہو، وہ جلد ہی اس سلسلے میں وضاحتی بیاں جاری کریں گے۔ پاکستان اور آزاد کشمیر کے پولیس نظام کو بخوبی سمجھتے ہوئے لیکن کسی کی بھی وکالت سے گریز کرتے ہوئے ہم یہ بات بڑے آرام سے کہہ سکتے کہ جہاں پیسے دے کر مقدمات درج ہوتے ہوں اور پیسوں کے زور پر ہی ختم ہوتے ہوں وہاں کے کیسز کی آڑ برطانیہ میں لینا عقلمندی ہوگی؟ پیسا سب کے پاس ہے اس کھیل کو عروج ملا تو ایسے ہی مقدمات کی بنا پر کوئی پاکستانی اور کشمیری پارلیمنٹ ہائوس، ٹین ڈائوننگ اسٹریٹ اور فارن کامن ویلتھ آفس جیسی جگہوں پر جانے کے قابل نہ رہے گا، لمحہ فکریہ ہے کہ ایسے میں فائدہ کس کا ہوگا؟ متعلقہ ممبر پارلیمنٹ کو ڈیوڈ کیمرون نے ہاوٴس آف کامنز میں کہا ہےکہ میں یہ جائزہ لے رہا ہوں کہ کونسلر عبدالعزیز کو10ڈاوٴننگ سٹریٹ میں پارٹی کا دعوت نامہ کیسے موصول ہوا۔