مقبول خبریں
اولڈہم ہوپ ووڈ ہاؤس ہیلتھ سنٹر میں خواتین کو آگاہی دینے کیلئے لیڈی ہیلتھ ڈے کا اہتمام
بھارتی لابی نے کشمیر کانفرنس کوانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کیے: شاہ محمود قریشی
تحریک کشمیر ڈنمارک کے زیر اہتمام کوپن ہیگن میں اظہار یکجہتی کشمیر کانفرنس کا انعقاد
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
میئرآف لوٹن (برطانیہ) نے شاہد حسین سید کو کمیونٹی سروسز پر شیلڈ پیش کی
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
راجہ نجا بت حسین کی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود اور وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر سے ملاقات
کشمیر‘ جہاں خواب بھی آنسو کی طرح ہیں!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
بھارت میں کرپشن الزامات ثابت ہونے پر 20 اراکین اسمبلی نااہل
لاہور: بھارتی الیکشن کمیشن نے سرکاری خزانے سے فائدہ اٹھانے اور کرپشن کا الزام ثابت ہونے پر 20 اراکین پارلیمٹ (ایم ایل ایز) کو نااہل قرار دے دیا۔ بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ نااہل قرار دیے جانے والے اراکین کا تعلق عام آدمی پارٹی سے ہے اور ان پر الزام تھا کہ انہوں نے سرکاری خزانے سے فائدہ اٹھایا۔ اس اقدام سے عام آدمی پارٹی کی سیاست کو دھچکا لگے گا۔ عام آدمی پارٹی پر ایک اور الزام یہ بھی تھا کہ انہوں نے فائدہ دینے والے محکموں کے بڑے عہدے اپنے پاس رکھے جبکہ حاصل ہونے والی آمدنی کو اپنے ذاتی مقاصد اور مفادات کے لیے استعمال کیا۔بھارتی الیکشن کمیشن نے غبن میں ملوث تمام ہی اراکین کو نااہل قرار دیتے ہوئے تحریری فیصلہ جاری کی جس کو توثیق کرنے کے لیے کاپی صدر کو بھی ارسال کی گئی ہے۔سیاسی تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ اگر بھارتی صدر نااہل قرار دینے والے فیصلے کی توثیق کرتے ہیں تو پھر دہلی کی 20 نشتوں پر ضمنی انتخابات منعقد کیے جائیں گے۔