مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
بھارت میں کرپشن الزامات ثابت ہونے پر 20 اراکین اسمبلی نااہل
لاہور: بھارتی الیکشن کمیشن نے سرکاری خزانے سے فائدہ اٹھانے اور کرپشن کا الزام ثابت ہونے پر 20 اراکین پارلیمٹ (ایم ایل ایز) کو نااہل قرار دے دیا۔ بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ نااہل قرار دیے جانے والے اراکین کا تعلق عام آدمی پارٹی سے ہے اور ان پر الزام تھا کہ انہوں نے سرکاری خزانے سے فائدہ اٹھایا۔ اس اقدام سے عام آدمی پارٹی کی سیاست کو دھچکا لگے گا۔ عام آدمی پارٹی پر ایک اور الزام یہ بھی تھا کہ انہوں نے فائدہ دینے والے محکموں کے بڑے عہدے اپنے پاس رکھے جبکہ حاصل ہونے والی آمدنی کو اپنے ذاتی مقاصد اور مفادات کے لیے استعمال کیا۔بھارتی الیکشن کمیشن نے غبن میں ملوث تمام ہی اراکین کو نااہل قرار دیتے ہوئے تحریری فیصلہ جاری کی جس کو توثیق کرنے کے لیے کاپی صدر کو بھی ارسال کی گئی ہے۔سیاسی تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ اگر بھارتی صدر نااہل قرار دینے والے فیصلے کی توثیق کرتے ہیں تو پھر دہلی کی 20 نشتوں پر ضمنی انتخابات منعقد کیے جائیں گے۔