مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
القاعدہ نے مالے میں دو فرانسیسی صحافیوں کو موت کے گھاٹ اتارنے کی ذمہ داری قبول کرلی
مالے ...القاعدہ سےتعلق رکھنے والے شدت پسندوں نے دو فرانسیسی صحافیوں کو موت کے گھاٹ اتارنے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔ صحارا میڈیا نے بتایا ہےکہ اُسے یہ دعویٰ شمالی افریقہ میں القاعدہ کی ایک شاخ اسلامی مغرب میں القاعدہ کے ایک اعلیٰ علاقائی کمانڈر، عبدالکریم ترقئی کےایک وفادارجنگجو سے موصول ہوا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ ہلاکتیں فرانس اور اُس کے اتحادیوں مالے، افریقی ممالک اور اقوام متحدہ کی طرف سے شمالی مالے میں مسلمانوں کے خلاف روا رکھے گئے جرائم کا بدلہ ہیں۔ شدت پسند ماضی میں اپنے پیغامات صحارا میڈیا کے ذریعے جاری کرتے رہے ہیں۔ فرانسیسی ریڈیو سے وابستہ 57 سالہ گزلین ڈوپانٹ اور 55 کلاڈ ورلن کی نعشیں ایئر فرانس کے خصوصی طیارے کے ذریعے منگل کی صبح وطن واپس لائی گئیں۔ فرانسیسی حکومت نے دونوں صحافیوں کے قاتلوں کو انصاف کے کٹہرے میں لاکھڑا کرنے کے عزم کا اظہار کیا تھا۔ مسلح افراد نے ایک مرد اور ایک خاتون صحافی کو اُس وقت اغوا کیا تھا جب وہ شمالی مالے کے کدال نامی قصبے میں نیشنل موومنٹ فور لبریشن آف ازاوادسے تعلق رکھنے والے ایک اہل کار کا انٹرویو کرکے واپس آرہے تھے۔ "ایم این ایل اے" ایک علیحدگی پسند گروپ ہے اورکدال اسکا ایک مضبوط گڑھ ہے، جو شمالی مالے میں طوراق کی آزاد ریاست کے لیے جدوجہد کر رہا ہے۔