مقبول خبریں
آشٹن گروپ کی جانب سے پوٹھواری شعر و شاعری کی محفل،شعرا نے خوب داد وصول کی
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
ہم مزید برطانوی بھارتیوں کوسیاست میں دیکھنا چاہتے ہیں، دیوالی تقریب سے کیمرون کا خطاب
لندن ...دنیا بھر کی طرح برطانیہ اور امریکہ دو ایسے ممالک ہیں جہاں پوری دنیا سے ہر رنگ نسل اور قومیت کے لوگ آباد ہیں جو ناصرف خود اپنے تہوار مناتے ہیں بلکہ حکومتی سرکردہ شخصیات کو مدعو کرنا اعزاز سمجھتے ہیں۔ یہ مسلمان ہوں، ہندو، سکھ، عیسائی یا یہودی ہوں سب کی کوشش ہوتی ہے کہ دیار غیر میں بھی ان کا تہوار پورے احترام سے منایا جائے۔ ہندو قوم کا ایسا ہی تہوار دنیا بھر میں منایا گیا۔ امریکی صدر اوبامہ اور انکی اہلیہ مشعل اوبامہ نے ہر سال کی طرح اس سال بھی اس تہوار کو انجوائے کیا جبکہ برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے اپنی اہلیہ سمانتھا کے ہمراہ لندن کے معروف شری سوامی نارائن مندر میں منعقدہ دیوالی کی تقریب میں حصہ لیا۔ اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارتی کمیونٹی کوبرطانوی زندگی میں اپنی اقدارکو فروغ دینے میں مزید کردار ادا کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ یہ خوش آئند بات ہے کہ زیادہ سے زیادہ بھارتی برطانوی سیاست میں حصہ لے رہے ہیں اور ہم چاہتے ہیں کہ وہ برطانوی حکومت میں مزید شامل ہوں۔ ہم پارلیمنٹ میں مزید بھارتی برطانویوں کی نمائندگی چاہتے ہیں۔ اس سے قبل مندر میں داخل ہونے سے پہلےبرطانوی وزیر اعظم اور ان کی اہلیہ نے احتراماً اپنے جوتے اتاردیئے اور ان کے ماتھے پر روائتی تلک لگایا گیا۔