مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
قصور واقعہ، وحشی درندے کو جلد پکڑ کر سر عام پھانسی دی جائے: سید باسط شاہ مشوانی
اولڈہم:پاکستان جو مذہب اسلام کے نام پر معرض وجود میں آیا،اسلامی تعلیمات سے دوری کی وجہ سے معاشرتی برائیوں کے چنگل میں پھنس چکا ہے اس کی بنیادی وجہ دوہرا نظام عدل و انصاف اور اشرافیہ کی عوامی خدمت کی بجائے ذاتیات کے تحفظ اور لوٹ مار کر کے تجوریاں بھرنا ہے تمام محکمہ جات کو لوٹ مار میں لگا دیا گیا ہے اور عوام کی جان و مال کا تحفظ غیر یقینی صورتحال سے دو چار ہے،لاہور کے علاقہ قصور میں سات سالہ ننھی بچی زینب کو اغوا کر کے جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور پھر سفاک درندہ صفت شخص نے قتل کر کے لاش کچرے کے ڈھیر میں پھینک دی،انسانیت کی اس سے بڑھ کر اور کیا توہین ہو سکتی ہے ہمارا پاکستانی معاشرہ پستی کی جانب گامزن ہے اس دلخراش واقعہ نے راتوں کی نیند اڑا دی ہے اور دن کو چین میسر نہیں ہے،یہ فرط جذبات سے لبریز باتیں تحریک انصاف برطانیہ کے جنرل سیکرٹری سید باسط شاہ مشوانی نے میڈیا کو دیئے گئے اپنے ایک بیان میں کیں،انہوں نے مزید کہا کہ اس سے بڑی ستم ظریفی یہ ہے کہ جب اس انتہائی ناقابل برداشت دل سوز واقعہ کے بعد قصور بھر کی عوام نے صدائے احتجاج بلند کی تو پولیس کی جانب سے فائرنگ کر کے دو افراد کو شہید کر دیا گیا،صوبہ پنجاب کی انتظامیہ اور حکومت پہلے ہی صوبہ بھر میں ظلم کی انتہا کر چکی ہے انہیں فی الفور مستعفی ہونا چاہئے،عوامی نمائندگی کا اخلاقی و قانونی جواز کھو چکے ہیں انہوں نے کہا تحریک انصاف برطانیہ والدین کے ساتھ دلی اظہار ہمدردی کرتے ہوئے مطالبہ کرتی ہے کہ وحشی درندے کو جلد از جلد پکڑ کر قانون کے مطابق سر عام پھانسی دی جائے تاکہ دوسروں کیلئے عبرت کا مقام ہو۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر