مقبول خبریں
جموں کشمیر نیشنل عوامی پارٹی برطانیہ برانچ کے زیرِ اہتمام فکر مقبول بٹ شہید ورکز یونیٹی کنونشن کا انعقاد
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
برطانیہ میں بسنے والے پاکستان کے سفیر ، اوورسیز کو ووٹ کا حق ملنا چاہئے:سینیٹرسراج الحق
اولڈہم:پاکستان کی بقا،جمہوری نظام کی مضبوطی،عدل و انصاف پر مبنی معاشرے کے قیام کیلئے اسلامی نظام کا نفاذ اشد ضروری ہے جب عوام اپنے نمائندگان کو منتحب کر کے ایوانوں میں بھیجتی ہے تو ان کی ترجیحات صرف عوامی خدمت ہونا چاہئے اگر قرآن و حدیث کے مطابق نظام حکومت چلایا جاتا تو آج ملک میں دوہرا نظام قائم نہ ہوتا وڈیروں اور سرمایہ داروں نے عوام کو محکوم بنا کر رکھ دیا ہے پاکستان آج تک صرف خاندانی نظام زندگی کی وجہ سے قائم دائم ہے جس میں عورت کے کردار کو مرکزی حیثیت حاصل ہے وگرنہ وہاں پر تو نیچے سے لے کر اوپر تک ہر شعبے میں ملاوت ہے،پاکستان میں فرقہ واریت کو فروغ دیا گیا پاکستان دشمن طاقتوں نے اس سے بھرپور فائدہ اٹھایا تمام مذہبی جماعتوں اور فرقوں سے تعلق رکھنے والوں کو اپنے اندر برداشت کا مادہ پیدا کرنا چاہئے اور بحیثیت قوم اتحاد و اتفاق کا مظاہرہ کرنا ہو گا یہ یاتیں سینیٹر امیر جماعت اسلامی مولانا سراج الحق نے یوکے اسلامک مشن برطانیہ کے زیر اہتمام یورپین اسلامک سینٹر اولڈہم میں انکے اعزاز میں دیئے گئے استقبالیہ کے موقع پر کیں،انہوں نے کہا کہ ہماری جماعت کا خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف سے حکومتی اتحاد ہے سیاسی فیصلے کرنے میں ہم آزاد ہیں اسی طرح جمعیت علما اسلام)ف(مرکز میں حکومتی اتحاد میں ہے،متحدہ مجلس عمل کی بحالی کے بعد سربراہان کا اجلاس جنوری میں ہو گا اگلا لائحہ عمل وہاں طے ہو گا،انہوں نے کہا کہ اگر کبھی حکومت میں آنے کا موقع ملا تو لوٹ مار میں ملوث افراد کو سر عام پھانسی دی جائے گی انہوں نے کہا کہ میاں برادران کے سعودی عرب جانے سے کوئی فرق نہیں تھا عمرہ کی ادائیگی کیلئے مسلمان وہاں جاتے ہیں اور گناہوں سے توبہ استغفار کرتے ہیں،NROماضی کا قصہ ہے اب ایسا ممکن نہیں قانون سے کوئی بھی بالا تر نہیں ہے،انہوں نے کہا کہ برطانیہ میں بسنے والے پاکستان کے سفیر ہیں،بیرون ممالک والوں کو ووٹ کا حق ملنا چاہئے،انہوں نے کہا کہ مساجد صرف نماز کی ادائیگی کیلئے نہیں بلکہ سماجی و کمیونٹی کی تعلیم و تربیت کیلئے ہونی چاہئیں،کیسا وقت آ گیا ہے کہ غیر مسلم طاقتیں ہمیں امن پسندی ،صلح جوئی،اتحاد و اتفاق کا درس دیتی ہیں حالانکہ قرآن کریم اور حضورؐ نے ہمیں بار بار اس کا درس دیا ہے اسلام کی سر بلندی کیلئے باہمی اتحاد و اتفاق کا عملی مظاہرہ کرنا ہو گا،آج اسلامی ممالک میں افراتفری خانہ جنگی ہمارے لئے لمحہ فکریہ ہے اس کی بنیادی وجہ دین اسلام قرآنی تعلیمات اور حضور پاکؐ کے اسوہ حسنہ پر عمل کرنا ہے،انہوں نے برطانیہ بھر میں بسنے والے مسلمانوں پر زور دیا کہ آپکا طرز زندگی،حسن اخلاق ایسا ہونا چاہئے کہ غیر مذاہب اس سے متاثر ہوں،والدین کی عزت و احترام اولاد پر لازم ہے،یتیموں،بیوائوں کی ہر ممکن مدد کرنی چاہئے،مساجد کی امامت کے قابل ایسے علما کے سپرد کرنی چاہئے جو اہل ایمان ہوں،اگر ہم نے اللہ کے حکام پر عمل نہ کیا تو نتیجہ غلامی،ذلت،بد امنی اور بے روز گاری ہو گا،انہوں نے کہا کہ بیرون ممالک خصوصاً برطانیہ میں بسنے والوں کو مادر وطن میں تبدیلی اور صحیح فلاحی اسلامی ریاست اور اسلامی نظام کے نفاذ کیلئے کردار ادا کرنا ہو گا،انہوں نے کہا کہ ہمیں ملک کی قیادت دیکر آزمائیں ملک و قوم کی صحیح معنوں میں خدمت کرتے ہوئے ایک فلاحی ریاست بنائیں گے،نظامت کے فرائض مولانا محمد اقبال نے سر انجام دیئے،تلاوت کلام پاک کا شرف قاری عبدالرحمن جبکہ ثنا مصطفےٰ ننھے منے طلحہ طارق نے پیش کی،یوکے اسلامک مشن کے صدر سکندر مرزا،سینئر نائب صدر میاں عبدالحق،نائب صدر ضیا الحق،نارتھ زون کے صدر ضمیر احمد،مجلس شوریٰ ممبران علمائے کرام و مشائخ،ناظمین برانچز اور میڈیا ایڈوائزر چوہدری خالد محمود کے علاوہ اہل تشیعہ کے علمائے کرام،سیاسی،سماجی و مذہبی شخصیات کی بڑی تعداد نے بھرپور شرکت کی۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر