مقبول خبریں
دی سنٹر آف ویلبینگ ، ٹریننگ اینڈ کلچر کے زیر اہتمام دماغی امراض سے آگاہی بارے ورکشاپ
پارٹی رہنما شعیب صدیقی کو پاکستان تحریک انصاف پنجاب کا سیکریٹری جنرل بننے پر مبارک باد
جموں کشمیر تحریک حق خود ارادیت جولائی میں برطانیہ و یورپ میں کانفرنسز،سیمینارز منعقد کریگی
قومی متروکہ وقف املاک بورڈ کا سربراہ پاکستانی ہندو شہری کو لگایا جائے:پاکستان ہندوکونسل کا مطالبہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
مظلوم کشمیری بھائیوں کیلئے پہلے کی طرح آواز بلند کرتے رہیں گے:مئیر کونسلر طاہر محمود ملک
اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر کونسل کا وسیم اختر چوہدری اور ملک ندیم عباس کے اعزاز میں استقبالیہ
مسئلہ کشمیر کو برطانیہ و یورپ میں اجاگر کرنے پر تحریکی عہدیداروں کا اہم کردار ہے: امجد بشیر
جس لڑکی نے خواب دکھائے وہ لڑکی نابینا تھی!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
آئینی حدود میں کام کر رہے ہیں، دھرنے میں فوج کا کردار نہیں تھا: آرمی چیف
اسلام آباد: ملکی تاریخ میں پہلی بار سینیٹ کو آرمی چیف کی طرف سے بریفنگ دی گئی۔ سینیٹ ہول کمیٹی کے اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ ملکی سلامتی اور استحکام کی خاطر سب کو مل کر چلنا ہو گا۔جنرل قمر جاوید باجوہ نے ارکان سینیٹ کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ جمہوری عمل کے ساتھ کھڑے ہیں، دھرنوں میں فوج کا کوئی کردار نہیں تھا، فوج اپنی آئینی حدود میں کام کر رہی ہے، مسلم ممالک پر پاکستان کی پالیسی غیرجانبدار ہے۔ذرائع کے مطابق، آرمی چیف نے دھرنوں میں فوج کا کردار ہونے کے تاثر کی نفی کرتے ہوئے کہا کہ دھرنے کے متعلق مسلسل اپڈیٹ لیتا رہا کیونکہ کسی بڑے سانحے سے بچنے کی خواہش تھی، دھرنے میں کسی صورت عسکری اداروں کا کردار نہیں تھا، جمہوری عمل کے ساتھ کھڑے ہیں اور فوج اپنی آئینی حدود میں کام کر رہی ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ٹی وی پر تجزیہ کرنے والے ریٹائر افسران پاک فوج کے ترجمان نہیں۔ذرائع نے بتایا ہے کہ ملک کو درپیش بیرونی خطرات اور خارجہ پالیسی کے متعلق سوالات پر جنرل باجوہ نے کہا کہ پاکستان کو دشمن خفیہ ایجنسیوں کے گٹھ جوڑ کا سامنا ہے، بیرونی سازشوں کے متعلق جانتے ہیں، ایران اور سعودی عرب کے حوالے سے خارجہ پالیسی کے مطابق چلتے ہیں، ملکی استحکام کے لئے سب کو مل کر کام کرنا ہو گا۔