مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پر نس ہیری کی شادی 19 مئی کو ونڈسر کاسل میں ہوگی ،بکنگھم پیلس کےشاہی خاندان کا اعلان
لندن :پرنس ہیری کی شادی 19 مئی کو ونڈسر کاسل میں ہوگی بکنگھم پیلس کے شاہی خاندان نے شادی کی تاریخ کا اعلان کر دیا ہے دنیا بھر کے شہزادے اور شہزادیوں کی شرکت متوقع ہے ،شاہی خاندان کے چشم و چراغ کی شادی کی اس تقریب میں برطانوی عوام کی گہری دلچسپی ہے برطانیہ کے متوقع بادشاہ پرنس ہیری کی شادی 2018 کی سب سے بڑی تقریب ہوگی جسے ملکی اور غیر ملکی سطح پر کوریج ملے گی ،پرنس ہیری کی رومانوی داستان کی بھنک تک کسی کو بھی نہیں لگی کہ کس طرح شہزادہ کینیڈین نژاد ہالی ووڈ کی اداکارہ مینگن کے عشق میں مبتلا ہوا میڈیا میں شاہی خاندان کے بارے میں شہزادی ڈیانا کی موت کے بعد رپورٹنگ کے لئے ایک ضابطہ اخلاق وضح کیا تھا اور زاتی اور نجی زندگی کو زیر بحث نہ لانے کے بارے میں پابندی عائد کی گئی تھی اسی لئے شاہی خاندان کے رومانس کی داستانیں اب میڈیا میں تواتر سے نشر نہیں ہوتیں وگرنہ جب شہزادہ چارلس اور شہزادی ڈیانا 1980 کی دہائی میں ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہوئے تو اس جوڑے کے عشق کی داستانیں نہ صرف مغربی میڈیا بلکہ پاکستان کی اخبارات میں جاسوسی ناولوں کی طرز پر کہانیوں کی طرح قسط وار شاہح ہوتیں تھیں جس سے پڑھنے والے نہ محظوظ ہوتے تھے بلکہ تجسس اور حسرت سے اگلی قسط کا انتظار کرتے تھے شاہی خاندان ابھی تک کسی حدتک اس پرانی تہذیب اور روایات کا علمبردار ہے جس میں رشتہ ناطہ جوڑ نے توڑنے اور نبھانے میں کچھ تکلف اور احتیاط ہوتی ہے پتہ نہیں وہ زمانہ کہاں اب اس جدید دور میں تحلیل ہوگیا جب دو محبت کرنے والے ایک دوسرے کو چوری چوری دیکھ کر شرما جاتے تھے بات کرنے میں تھوڑے نروس ہوتے تھے اپنی محبت کا اظہار کرنے میں سالہاسال لگاتے تھے پھر کبھی خط، کبھی پھول اور کبھی کبوتر آڑا کر اپنی محبت کا اظہار کرتے تھے پھر والدین کی رضامندی حاصل کرتے تھے اج کل بس یہ سارا کچھ ناپید ہے جھٹ منگنی جھٹ بیاہ اور پھر طلاق علیحیدگی -کاش کہ وہ زمانہ واپس آ جائے وہ رسمیں وہ وقت لوٹ آئے تاکہ والدین سکھی ہوسکیں شہزادہ ہیری اور مینگن کے لئے نیک خواہشات کے اس مختصر سے پیغام میں عرض ہے کہ لیڈی ڈیانا کا جب بھی چہرہ سامنے آتا ہے تو یقین نہیں آتا کہ دنیا کی یہ خوبصورت شہزادی مرچکی یے وہ نہ صرف خوبصورت تھی بلکہ وہ دکھی انسانیت کے لئے بھی کام کرتی تھی اور اس کی یہی ادا اس کے حسن کو اور خوبصورت بناتی ہے جسے مر کر بھی آج یاد کیا جاتا ہے