مقبول خبریں
دار المنور گمگول شریف سنٹر راچڈیل میں جشن عید میلاد النبیؐ کے حوالہ سےمحفل کا انعقاد
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر:بھارتی فوج نے کشمیریوں پر زندگی تنگ کر دی،مزید 3بے گناہ شہید
سری نگر:مقبوضہ ریاست میں بھارتی فوج کے انسانیت سوزمظالم نے معصوم کشمیریوں پرزندگی تنگ کردی،نام نہادآپریشن میں مزید3بے گناہ نوجوان شہیدکردئیے گئے ،جس کیخلاف مظلوموں نے زبردست احتجاجی مظاہرے کئے ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق:قابض فوج نے ضلع کلگام میں ایک دیہات کامحاصرہ کرکے گھرگھرتلاشی لی،اس دوران گھریلوسامان کی توڑپھوڑ جبکہ بچوں اورخواتین سے شرمناک سلوک کیاگیا،طاقت کے نشے میں دھت بھارتی فوج نے متعددمکانات کودھماکہ خیزموادسے اڑادیاجس کے بعد ایک تباہ شدہ گھرکے ملبہ سے 3نوجوانوں کی لاشیں برآمدہوئیں،اطلاع پھیلتے ہی مقبوضہ ریاست بھرمیں غم وغصے کی لہردوڑ گئی،شہداکی نمازجنازہ میں ہزاروں افرادنے شرکت کی جبکہ اس موقع پربھارت کیخلاف زوردارنعرے لگائے ،بعدازیں ظالمانہ کریک ڈاؤن اوربے گناہ شہادتوں کیخلاف مختلف علاقوں میں لوگ احتجاجاًسڑکوں پرنکل آئے اوربھارتی جبرواستبدادکیخلاف فلک شگاف نعرے بازی کی،غاصب فورسزنے مسلسل ظلم کیخلاف آوازاٹھانے والوں کوبہیمانہ تشددکانشانہ بنایا،نہتے افرادکیخلاف آنسوگیس شیلنگ اورپیلٹ گن فائرنگ کابے دریغ استعمال کیاگیاجبکہ آزادی کے متوالوں نے جواب میں زبردست پتھراؤکیا،شدیدجھڑپوں کاسلسلہ کئی گھنٹے جاری رہاجس دوران کئی مظاہرین زخمی ہوگئے جبکہ متعددکوگرفتارکرلیاگیا۔دوسری طرف ریاستی پولیس کے سربراہ ایس پی ویدنے مضحکہ خیزدعویٰ کیاکہ تینوں نوجوان جھڑپ میں مارے گئے اورانکاتعلق’لشکرطیبہ‘سے تھا،ان میں سے 2پاکستانی جبکہ ایک مقامی باشندہ تھا۔دریں اثناسرینگر-جموں شاہراہ پربھارتی فوج کی پٹرولنگ پارٹی پرحملہ میں اہلکارجتندرسنگھ ماراگیاجبکہ2زخمی ہوئے ،اسکے بعدقابض فوج کی بھاری نفری نے قریبی دیہات میں بڑے پیمانے پرسرچ آپریشن شروع کردیا۔مزیدبرآں قابض فوج نے جنوبی کشمیرمیں گھرگھرسروے شروع کردیاجس دوران بھارتی فوجی ہرگھرکے باسیوں،خصوصاًنوجوانوں کاڈیٹااکٹھاکررہے ہیں،انڈین آرمی کے ترجمان کرنل راجیش کالیانے فوجی سروے کی تصدیق کی۔ادھربھارتی سپریم کورٹ نے 26سال بعد30کشمیری خواتین کی بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں آبروریزی کے مقدمہ کوسماعت کیلئے منظورکرلیا،1991ئمیں23اور24فروری کی رات بھارتی فوجیوں نے ضلع کپواڑہ کے علاقہ کنن پوشپورہ کامحاصرہ کیااور گھروں میں داخل ہوکرمردوں کوگرفتارکرلیاجبکہ خواتین کی بلاامتیازعصمت دری کی گئی،گزشتہ روزبھارتی عدالت عظمیٰ کی جسٹس جے چلمساراورجسٹس سنجے کش کورنے ابتدائی سماعت کے بعداپیل کوباقاعدہ منظور کرتے ہوئے وزارت دفاع اوردیگراداروں کونوٹس جاری کردئیے ۔دوسری جانب سید علی گیلانی ،میرواعظ محمد فاروق اورمحمد یاسین ملک پرمشتمل مشترکہ مزاحمتی قیادت نے ایمنسٹی انٹرنیشنل، ہیومن رائٹس واچ اور اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن کے نام خطوط میں اپیل کی کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر فوری توجہ دی جائے ،بھارتی فورسزشہریوں کے قتل عام کے ساتھ ساتھ بلاتفریق نوجوانوں کو کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت کسی عدالتی کارروائی کے بغیر جیلوں میں ڈال رہی ہیں۔