مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
جنگی جرائم کے ارتکاب میں برٹش مسلم رہنما کو بنگلہ دیش میں سزائے موت کا حکم !!
لندن ... برطانیہ میں آباد ایک بنگلہ نژاد رہنما کو بنگلہ دیش میں موت کی سزا سنائی گئی ہے۔ معین الدین چوہدری برطانیہ میں مسلمانوں کی معروف تنظیم مسلم کونسل آف بریٹن کے بانیوں میں سے ہیں۔ بنگلہ حکومت کا ان پر الزام ہے کی ١٩٧١ کی جنگ میں وہ جنگی جرائم کے مرتکب ہوئے تھے۔ اسی الزام میں ایک امریکی مسلمان شہری اشرف الزمان کو بھی سزائے موت سنائی گئی ہے۔ ان دونوں کو بنگلہ دیش کی آزادی کے آخری ایام میں جنگ آزادی کے 18 حامیوں کو اغوا اور قتل کرنے کے گیارہ معاملوں میں مجرم قرار دیا گيا۔ اور جنگی جرائم کی ایک مخصوص عدالت میں ان کی غیر موجودگی میں سماعت کی گئی۔ سرکاری وکلا کا کہنا ہے کہ چودھری معین الدین البدر نامی ملیشیا گروپ کے رکن تھے۔ البدر گروپ پر یہ الزام ہے کہ اس نے پاکستانی فوج کے ساتھ بنگلہ دیش کی آزادی کے حامی رضاکاروں، اساتذہ اور صحافیوں کے خلاف جنگ کے آخری دنوں میں لڑائی کی تھی۔ بنگلہ دیش کی برسر اقتدار جماعت عوامی لیگ کی جانب سے سنہ 2010 میں قائم کردہ یہ ٹریبیونل جنگ آزادی کے دوران پاکستان کا ساتھ دینے والے مقامی افراد کے خلاف مقدمات چلا رہا ہے۔ حکومت کے مطابق اس جنگ میں تیس لاکھ افراد مارے گئے تھے۔