مقبول خبریں
عبدالباسط ملک کے والدحاجی محمد بشیر مرحوم کی روح کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ تقریب
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
حج و عمرہ کی ادائیگی،ضروری سہولیات کی فراہمی پرسمجھوتا نہیں کرینگے:ڈائریکٹر حاجی ٹورز
مانچسٹر:سعودی عرب کی شاہی حکومت کے سربراہ فرماں روا شاہ سلمان نے اعلان کیا ہے کہ اگر دنیا بھر سے مسلمان دو سال کے اندر دوبارہ حج و عمرہ کی ادائیگی کیلئے ویزہ حصول بارے درخواست دیں گے تو ان سے دو ہزار ریال فیس وصول کی جائے گی،حج اسلام کا اہم ستون ہے اور ہر مسلمان جو صاحب مال ہو ادائیگی فرض ہے برطانیہ بھر سے اس نیک مقصد کیلئے جانے والے احباب کو سوچ سمجھ اور پوری تحقیق کے بعد ایسے ایجنٹس یا ٹور آپریٹرز کے ذریعے حج و عمرہ کی ادائیگی کیلئے جائیں جو سعودی عرب کی حکومت کے منظور شدہ ایجنٹ ہوں اور برطانوی حکومت بھی انہیں تسلیم کرے،ان خیالات کا اظہار حاجی ٹورز کے ڈائریکٹر حاجی محمد عارف نے میڈیا کو دیئے گئے اپنے ایک بیان میں کیا،انہوں نے مزید کہا کہ قوانین کا اطلاق اس ماہ10اکتوبر2017سے شروع ہو چکا ہے،انہوں نے کہا کہ ہم نے اس بات کا تہیہ کیا ہوا ہے کہ حجاج کرام اور عمرہ کی ادائیگی کیلئے جانے والے افراد کو تمام ضروری سہولیات کی مکمل فراہمی پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا اور تجریہ کار راہنمائوں سے استفادہ حاصل کیا جاتا ہے تاکہ زیارات اچھے طریقے سے کروائی جائیں،مقصد انسانیت کی خدمت اولین ترجیح ہے اس پورا کرنے کیلئے تگ و دو میں مصروف ہیں اور ہمیں اس بات پر فخر ہے کہ ہمارے ساتھ حج و عمرہ کی ادائیگی کیلئے جانے والے افراد مطمئن ہوتے ہیں،انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنی نوجوان نسل کو دین اسلام سے محبت اور رب کریم کے گھر اور حضرت محمدؐ کے روضہ رسول کی زیارت کیلئے انہیں ضرور حج و عمرہ کی ادائیگی کیلئے اپنے ساتھ لے جائیں کیونکہ اسلام کی خدمت مستقبل میں انہوں نے ہی کرنی ہے اور بحیثیت مسلمان یہ ہم پر فرض ہے ہم اس سلسلے میں معاونت کیلئے موجود ہیں۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر