مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
معاشرے میں تعمیر و ترقی کے لئے میڈیا کا کردارمرکزی حیثیت کا حامل ہوتا ہے:اعجاز الحق
مانچسٹر:کسی بھی معاشرے کی تعمیر و ترقی میں میڈیا کا کردار مرکزی حیثیت کا حامل ہوتا ہے اور صحافت کے پیشہ سے وابستہ افراد اس کے آئینہ دار ہوتے ہیں بد قسمتی اور ستم ظریفی کا یہ عالم ہے کہ ترقی پذیر ممالک میں طاقتور طبقات اپنی غلطیوں کو چھپانے کیلئے جب صحافی حضرات غیر جانبداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے حق و سچ کا عَلم بلند کرتے ہیں تو مختلف حربوں سے ان کی آواز دبانے کیلئے اوچھے ہتھکنڈے استعمال کرتے ہیں،پاکستان میں صحافیوں پر تشدد اور جان سے مارنے کے واقعات عام ہیں ایسی ہی افسوس ناک صورتحال چند روز قبل صحافی احمد نورانی کے ساتھ پیش آئی کہ نا معلوم افراد نے گاڑی سے اتار کر انہیں جسمانی تشدد کا بد ترین نشانہ بنایا اور ان کے سر پر لوہے کے راڈ سے مارا اس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے اس سے بڑی ستم ظریفی یہ ہے کہ ابھی تک حکومت اور دیگر سکیورٹی اداروں نے اس کے مرتکب کرداروں کا کھوج لگانے میں کوئی خاطر خواہ پیش رفت نہیں کی جو باعث تشویش ہے،ان خیالات کا اظہار پاکستان قومی اسمبلی کے رکن و سابق وزیر اعجاز الحق،ممبر برطانوی پارلیمنٹ و شیڈو وزیر امیگریشن افضل خان،وارینگٹن سے ممبر پارلیمنٹ فیصل رشید نے ایم ایل ڈاکٹرز کی جانب سے اعجاز الحق کے اعزاز میں رکھی گئی ایک تقریب کے موقع پر کیا،انہوں نے مزید کہا کہ صحافی حضرات پاکستان کے اندر بہتری لانے اور خامیوں کی نشاندہی کرنے کیلئے پچھلے چند برسوں سے پیشہ وارانہ ذمہ داریاں احسن طریقے سے سر انجام دے رہے ہیں اب غیر یقینی اور سکیورٹی کی عدم فراہمی کی وجہ سے انکے اندر خوف پیدا ہو گا اور وہ ذمہ داریاں احسن طریقے سے ادا نہیں کر سکیں گے،اس کیلئے حکومت کو تمام تر وسائل بروئے کار لاتے ہوئے صحافت کے شعبہ سے وابستہ افراد کو ہر طرح کی سکیورٹی فراہم کرنے میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کرنا چاہئے،اس موقع پر ڈاکٹرز صاحبان محمد اقبال،حفیظ الرحمن،ڈاکٹر راشد ضیا،سالیٹر شعیب تاج و دیگر نے بھی اظہار خیال کیا،میاں نعیم اختر،بشیر امتیاز،منور محمد،سعید ہاشمی،جاوید اقبال،کونسلر عابد چوہان،ریحان راجہ،ڈاکٹر فخر اعوان،ڈاکٹر نعیم شاہ بھی موجود تھے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر