مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
SCENEریسٹورنٹ کو باقی ایشیائی ریسٹورنٹ سے منفرد حیثیت حاصل ہے: محمد آصف علی
مانچسٹر:انسان اگر نیک نیتی سے محنت اورکسی بھی شعبہ ہائے زندگی میں ترقی کے منازل طے کرنے کی ٹھان لے تو راستے میں آنے والی تمام رکاوٹیں ہٹ جاتی ہیں اور کامیابی و کامرانی قدم چومتی ہے اس میں سب سے بڑا عمل دخل والدین کی دعائوں کا ہوتا ہے انکی دی ہوئی تربیت و تعلیم اور بتائے ہوئے راہنما اصول،زندگی کے تجربات سے انسان سیکھتا ہے،ہمارے والد محترم کم عمری میں روزگار کی غرض سے آزاد کشمیر ڈڈیال سے برطانیہ آئے پھر ہمیں یہاں بلایا اچھی تعلیم کے ساتھ بحیثیت انسان و مسلمان نیک نیتی ایمانداری کا درس دیا ایک بھائی ڈاکٹر ہے جبکہ دوسرا بھی اعلیٰ تعلیم یافتہ ہے،والد محترم نے درس دیا ہے کہ جو لوگ محنت کے ساتھ کاروبار کرتے ہیں کامیابی قدم چومتی ہے،ان خیالات کا اظہار سینSCENEریسٹورنٹ جو کہ مانچسٹر کے سنٹر میں واقع ہے کہ مالک محمد آصف علی مغل نے میڈیا نمائندگان سے ایک خصوصی بات چیت کے موقع پر کیا،انہوں نے مزید کہا کہ ہمارا ریسٹورنٹ مانچسٹر میں واقع عدالتوں کے قریب ہے اس لئے جج صاحبان سے لے کر دیگر نامور شخصیات بھی کھانے کیلئے آتی ہیں اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ ہم نے اپنے ریسٹورنٹ کو مغلیہ دور کی طرز پر ڈیزائن کیا ہوا ہے اور وہی نمونہ پیش کرتا ہے اس کے علاوہ پاکستان اور آزاد کشمیر کی پرانی ثقافت کے منظر کو اپنایا ہوا ہے اور ہر چھ ماہ کے بعد مختلف اقسام کے کھانے گاہکوں کی توجہ کا مرکز بنتے ہیں اورکوالٹی پر کبھی بھی سمجھوتہ نہیں کیا اسکا معائنہ روز کا معمول ہے،باقی ایشیائی ریسٹورنٹ سے اسے منفرد حیثیت حاصل ہے،انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے والدین اور بزرگوں نے ساٹھ کی دہائی میں انتہائی سخت مشقت کر کے جو مقام آج ہمیں دلایا ہے ہماری نوجوان نسل کیلئے بہت زیادہ سنہری مواقع میسر ہیں وہ کاروبار شروع کر کے ترقی حاصل کر سکتے ہیں،انہوں نے کہا کہ نوجوانوں سے مستقبل وابستہ ہے انکی تعلیم و تربیت ہماری اولین ترجیح ہونی چاہئے تاکہ وہ والدین کے ساتھ مادر وطن کا نام روشن کر سکیں،انہوں نے کہا کہ کاروبار میں کامیابی کا ایک راز یہ بھی ہے کہ اپنے تمام ملازمین کے ساتھ دوستانہ برتائو رکھنا چاہئے کیونکہ کاروبار میں کامیابی پوری ٹیم کا ملکر کام کرنے سے ممکن ہوتی ہے انہیں اس بات پر فخر ہے کہوہ اپنے سٹاف کو خاندان کا حصہ سمجھتے ہیں اسی وجہ سے کاروبار ہمیشہ ہی نفع بخش رہا ہے۔خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر