مقبول خبریں
اولڈہم ٹاؤن میں پہلی جنگ عظیم کی صد سالہ تقریب،جم میکمان،مئیر کونسلر جاوید اقبال و دیگر کی شرکت
مشتاق لاشاری سی بی ای کا پورٹریٹ کونسل ہال میں لگا نے کی تقریب، بیگم صنم بھٹو نے نقاب کشائی کی
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مولانا میاں محمد چشتی کی دینی و فلاحی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی :علمائے کرام
اولڈہم: جو شخصیات اپنی زندگی کو دینی و فلاحی خدمات کیلئے وقف کردیتی ہیں تاریخ انھیں ہمیشہ یاد رکھتی ہے اور ان کا کردار قوم کے لئے ایک اعلی نمونہ ہوتا ہے - ایسی ہی ایک شخصیت برطانیہ کے نوجوان خطیب اور دینی سکالر صاحبزادہ علامہ محمد طاہر بغدادی کے والد گرامی حضرت مولانا میاں محمد چشتی رحمة اللہ علیہ ہیں - جو نصف صدی تک دین اسلام کیلئے علمی ، دینی، تعلیمی ، روحانی اور معاشرے کے لئے فلاحی خدمات پیش کرتے ہوئے علالت کے بعد گزشتہ دنوں لاہور پاکستان میں اپنے خالق حقیقی سے جا ملے -ان خیالات کا اظہار مقررین نے مولانا چشتی علیه الرحمة کے ایصال ثواب کیلئے اور خدمات کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لئے بلال جامع مسجد اولڈہم میں منعقدہ تقریب میں کیا ، مولانا قاری محمد طیب نقشبندی ،قاری صابر علی صابر، مولانا محمد بخش،علامہ محمد طاہر بغدادی، علامہ برکات احمد چشتی، قاری غلام مصطفٰی ہزاروی،قاری عبدالشکور ہزاروی نے اپنے خطابات میں کہا کہ میاں صاحب سچے عاشق رسول اور عالم باعمل تھے زندگی بھر نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے اسوہ حسنہ پر عمل پیرا رہے-انھوں نے بیک وقت اپنی اولاد، تلامذہ اور متوسلین و محبین کی ایسی اعلی تربیت کی جو معاشرے کیلئے بہترین مثال ہے مولانا علیہ الرحمۃ نے دینی روحانی تعلیمی اور تربیتی خدمات سرانجام دیتے ہوئے ایک ہی مسجد میں 41 سال کا طویل ترین عرصہ گزارا اور اسی مسجد میں انتقال فرمایا اور ساتھ ہی ساتھ 25 سال تک محکمہ تعلیم حکومت پنجاب کے دو تعلیمی اداروں میں اسلامیات و عربی کے استاد بھی رہے،آپ کی خدمات علماء آئمہ و خطباء اور اساتذہ کے لئے بہترین مثال ہیں ،اور انکے صاحبزادگان، تلامذہ اور متوسلین ان کے لئے صدقہ جاریہ ہیں تعزیتی اجلاس میںقاری خیر محمد چشتی، سید نعمان حسین شاہ جماعتی، ڈاکٹر صفی الدین خان،قاری محمد اسلم سیالوی،قاری خادم حسین چشتی، مولانا نظام الدین مصباحی، مولانا اقبال مصباحی، مولانا محمد محسن،علامہ عمران عالم قادری، مولانا شبیر سیالوی،قاری محمد راسب،مولانا ظہور احمد چشتی،قاری فاروق نورانی،قاری شبیر خان، مولانا سعید سیالوی،مولانا عتیق حسین قاری نصیر احمد، حافظ ضیاءالحق،نعیم نذیر اعوان، چوہدری محمد اقبال، حاجی الطاف حسین، حاجی اخلاق مرزا،مولانا اختر علی،حاجی عبدالعزیز مغل، حاجی عبدالغفورحاجی عبدالمجيد نے خصوصی شرکت کی درود و سلام اور ختم شریف پڑھا گیا قاری محمد طیب نقشبندی نے مولانا میاں محمد چشتی رحمة اللہ علیہ کے ایصال ثواب کیلئے خصوصی دعا کروائی، اختتام پر شرکاء کو کھانا پیش کیا گیا -خصوصی رپورٹ:فیاض بشیر