مقبول خبریں
اولڈہم کے نوجوانوں کی طرف سے روح پرور محفل، پیر ابو احمد مقصود مدنی کی خصوصی شرکت
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
خواتین کو ہراساں کرنے کیخلاف بالی ووڈ اداکارہ ریچا چڈا بھی میدان میں آ گئیں
ممبئی:خواتین کو ہراساں کرنے کیخلاف اب بالی ووڈاداکارہ ریچا چڈا بھی میدان میں آگئیں ۔ریچا چڈا کی جانب سے لکھے گئے بلاگ میں انہوں نے ’’می ٹو‘‘ ٹرینڈ کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ گزشتہ 2 ہفتے سے ان سے بار بار پوچھا جا رہا ہے کہ وہ ’’می ٹو‘‘ کے بارے میں کیا سوچتی ہیں جس پر انہوں نے لکھا کہ بھارت میں تو خواتین کے خلاف زبانی، بصری اور جنس کی بنیاد پر ہراساں کرنا معمول کی روایت ہے ۔اس ملک میں ’’ریپ‘‘ کو کسی کی ’’عزت لوٹنا‘‘ کہا جاتا ہے جسے جرم سمجھا ہی نہیں جاتا ۔اداکارہ ریچا چڈانے لکھا بھارت میں خواتین کا مالک اہل خانہ اور مردوں کو سمجھا جاتا ہے ، شادی کے بعد کسی بھی خاتون کی نوکری کرنے سمیت دیگر فیصلے اسکا شوہر اور سسرال والے کرتے ہیں ۔بالی ووڈاداکارہ کے مطابق بھارت میں ہر 22 منٹ کے اندر ایک خاتون کا ’’ریپ‘‘ ہوتا ہے جبکہ یہاں خواتین زندہ رہنے کیلئے جنسی طور پر ہراساں ہونے کی صورت میں ٹیکس ادا کر رہی ہیں ۔