مقبول خبریں
برطانوی حکومت مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا اثر و رسوخ استعمال کرے:ایم پی جیوڈتھ کمنز
کشمیر انسانی حقوق کی پامالیوں کا گڑھ ،اقوام عالم نوٹس لے، بھارت پر دبائو بڑھائے: فاروق حیدر
بھارت اپنے توپ و تفنگ سے اب کشمیری عوام کے جذبہ حریت کو دبا نہیں سکتا:بیرسٹر سلطان
تین طلاقوں پر سزا، اسلامی نظریاتی کونسل کا وسیع پیمانے پر مشاوت کا فیصلہ
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
سید حسین شہید سرور کا سابق پراسیکیوٹر ایڈوکیٹ جنرل ریاض نوید و دیگر کے اعزاز میں عشائیہ
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جانا چاہیے تاکہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ کر سکیں : مقررین
آدمی کو زندگی کا ساتھ دینا چاہیے!!!
پکچرگیلری
Advertisement
مقبوضہ کشمیر:بھارتی مظالم ،خاتون سمیت2شہید ‘60گرفتار،وادی میں مکمل ہڑتال
سرینگر :مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم جاری، خواتین کی چٹیا کاٹنے کا سلسلہ نہ رک سکا،حریت قیادت کی کال پر وادی میں مکمل ہڑتال ،جگہ جگہ مظاہرے ،خاتون سمیت2افراد شہید، کئی زخمی،60افراد کو گرفتار کر لیا گیا۔تفصیلات کے مطابق بھارتی فوجیوں نے ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع کپواڑہ کے علاقے ہندواڑہ میں اننوان کے مقام پرگھر گھر تلاشی کے دوران ایک نوجوان کو شہید کردیا۔بھارتی فوج نے کادعویٰ ہے کہ شہید ہونے والا نوجوان مجاہد تھا۔پلوامہ کے علاقے ترال میں فائرنگ سے یاسمین نامی خاتون کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا،گولی لگنے سے دوسری خاتون روبی زخمی ہو گئی ۔احمد نگر صورہ ،نوپورہ بانڈی پورہ میں 2خواتین کی چوٹیاں کاٹنے کے علاوہ ایک کا جھمکا بھی اڑا لیا گیا ۔وادی میں خواتین کے بال کاٹنے کے خلاف احتجاجی مظاہرئے کئے گئے اس دوران مظاہرین اورفورسز کے درمیان شدید جھڑپیں بھی ہوئیں۔ کرالہ پورہ چاڈورہ میں احتجاجی مظاہرین پر فائرنگ سے 16سالہ نوجوان ارسلان شدید زخمی ہو گیا جبکہ بارہمولہ، سوپور اور کپواڑہ میں60 نوجوانوں کو گرفتار کر لیا گیا۔بھارتی فورسز نے دعویٰ کیا ہے کہ 3کشمیری مجاہدین کو راجستھان سے حراست میں لیا گیا ہے ۔جن میں سہیل ،عمر حسین اور واسد رشید شامل ہیں ۔تحریک آزادی کولگام کے رہنما 62سالہ محمد شعبان ڈار کو11ماہ بعد بھی رہائی نہ مل سکی ۔باپ کی اسیری کے باعث لڑکی عاطفہ تبسم کی شادی ملتوی کردی گئی ۔مزاحمتی قیادت کی اپیل پر وادی میں سول کرفیو رہا اور نظام زندگی تھم کر رہ گیا، کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے خواتین کی چوٹیاں کاٹنے کے بڑھتے ہوئے واقعات پر تشویش کاا ظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ حربے ہمیں دبانے کے لیے استعمال کئے جارہے ہیں۔ہماری تحریک صداقت پر مبنی ہے جو ان ہتھکنڈوں نہیں دب سکتی۔