مقبول خبریں
یوم عاشور کے حوالہ سے نگینہ جامع مسجد اولڈہم میں روح پرور،ایمان افروز محفل کا اہتمام
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
میاں جی کی لڑکیاں
پکچرگیلری
Advertisement
نواز شریف نے ملک کی بجائے اپنے خاندان کو ایشئن ٹائیگر بنا دیا: عمران خان
سیہون: چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے وزیر اعلیٰ سندھ کے آبائی شہر میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ کرپشن ہے، پانامہ کیس کی وجہ سے پہلی دفعہ پاکستان کے لوگوں کو سمجھ آئی ہے کہ کرپشن کیا ہے، سندھ کرپشن سے سب سے زیادہ متاثر ہوا کیونکہ کرپشن اور زرداری ایک ہی چیز کے دو نام ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں روزانہ 12 ارب روپے کی کرپشن ہوتی ہے جبکہ سالانہ 4 ہزار ارب روپے کی کرپشن ہوتی ہے، اگر ہم اسے ختم کر دیں تو عوام کے سارے مسائل حل ہو سکتے ہیں، تعلیم اور پینے کے صاف پانی کے مسائل حل ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کے ہسپتالوں میں جگہ نہ ہونے کی وجہ سے مائیں سڑکوں پر بچے جن رہی ہیں، شہباز قلندر کے مزار پر دھماکہ ہوا تو یہاں ہسپتال نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کو دوردراز کے شہروں میں لے جانا پڑا، ملک میں ہسپتال نہ ہونے کی وجہ پیسے نہ ہونا ہے، اگر ہم کرپشن پر قابو پا لیں تو یہ مسائل حل ہو سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ایف بی آر 35 سو ارب کا ٹیکس جمع کرتا ہے جبکہ 32 سو ارب روپے کی کرپشن کرتا ہے، اگر ہم کرپشن پر قابو پا لیں تو ہمارے پاس عوام کو تمام سہولیات مل سکتی ہیں، نواز شریف نے ملک کی بجائے اپنے خاندان کو ایشئن ٹائیگر بنا لیا، جب مشرف کا اقتدار ختم ہوا تو ہر پاکستانی 25 ہزار کا مقروض تھا، آج ہر پاکستانی 1 لاکھ 20 ہزار کا مقروض ہے، زرداری اور نواز شریف نے عوام کو قرضوں کے بوجھ تلے دبا دیا، پاکستان سے ہر سال 1 ہزار ارب روپے کی منی لانڈرنگ ہوتی ہے، اگر یہی روپیہ ملک میں خرچ ہوتا تو یہاں سڑکیں بنتیں، فیکٹریاں لگتیں اور نوجوانوں کو روزگار ملتا لیکن منی لانڈرنگ کی وجہ سے ہمیں اپنی ضروریات پوری کرنے کیلئے قرض لینا پڑتا ہے اور قرض کی قسط دینے کیلئے عوام پر ٹیکس لگتے ہیں، مہنگائی بڑھتی ہے اور عوام مزید بوجھ تلے دبتے چلے جاتے ہیںانہوں نے آصف زرداری پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان کے کہنے پر عزیر بلوچ نے بلاول ہاؤس کے اردگرد کے گھر زبردستی خالی کروائے، عزیر بلوچ ماہوار فریال تالپور کو بھتہ دیتا تھا۔ عمران خان نے کہا کہ ہم نے بلاول کو کے پی میں جلسوں سے نہیں روکا لیکن ہمیں سیہون میں جلسے سے روکا گیا، انشاء اللہ اب سندھ میں بھی ہم الیکشن جیتیں گے اور یہاں بھی غیرسیاسی پولیس بنائیں گے، پی پی رہنماء پولیس کو لوگوں کو ڈرانے دھمکانے کیلئے استعمال کرتے ہیں، سیہون کے لوگو ہم نے مل کر کرپٹ مافیا کا مقابلہ کرنا ہے، آج کے پی سب صوبوں سے زیادہ پُرامن ہے، ہم وہ پولیس بنائیں گے جو طاقتور کی نہیں کمزور کی مدد کرے گی۔عمران خان نے کہا کہ سندھ اور پنجاب میں ہماری جماعت کے لوگوں پر ایف آئی آرز کٹوائی گئیں، ہم نے کسی سیاسی مخالف پر ایک پرچہ نہیں کٹوایا، میں نے کسی بینک سے قرض نہیں لیا، کوئی درجہ چہارم کا ملازم بھی کے پی میں کود نہیں رکھوایا، کوئی کارکانہ نہیں لگایا۔عمران خان نے سیہون والوں سے کہا کہ ہمیں حکومت ملی تو میں ہر کمزور طبقے کے ساتھ کھڑا ہوں گا، ہر کسان، ہر ہاری، ہر نوجوان کے ساتھ کھڑا ہوں گا، طاقتور اور کمزور کو ایک ساتھ کھڑا کروں گا، آج کے پی میں غربت آدھی کم ہو گئی ہے جس کی وجہ ہماری اصلاحات ہیں، ہم نے ہسپتال ٹھیک کئے، صوبے کے ساٹھ فیصد لوگوں کو ہیلتھ کارڈ دیئے، سکولوں کا نظام ٹھیک کیا، اب سو فیصد سکولوں میں اساتذہ موجود ہیں، چالیس ہزار لوگوں کو میرٹ پر ٹیچر بھرتی کیا، دونون جماعتوں نے 6، 6 باریاں لیں، ہم نے صرف ایک باری لی ہے اور ساڑھے تین سو چھوٹے ڈیم بنائے ہیں جس سے غریبوں کو کم قیمت بجلی مل رہی ہے اور یوں صوبے میں غربت میں کمی آ رہی ہے۔عمران خان نے اعلان کیا کہ چین کی طرح ہم بھی اپنے لوگوں کو غربت سے نکالیں گے، ہم نے کے پی میں 1 ارب درخت لگائے ہیں تاکہ ماحول بہتر ہو مگر سندھ میں کبھی کسی نے انسانوں اور ماحولیات کا نہیں سوچا، منچھر جھیل تباہ ہو گئی ہے، اقتدار ملا تو ہر صوبے میں ایک ایک ارب درخت لگائیں گے، سیہون والو! وعدہ کرتا ہوں ملک میں بہت بڑی تبدیلی آ رہی ہے، نواز شریف کے بعد جلد اور بھی کئی لوگ کہیں گے کہ ہمیں کیوں نکالا؟ نواز کے بعد شہباز کو نہیں آنے دیں گے، اس کے خلاف حدیبیہ پیپر ملز کا کیس ہے۔عمران خان نے کہا کہ ہم سب نے مل کر کرپٹ لوگوں کو شکست دینی ہے، 21 سال سے عوام کو روٹی، کپرا اور مکان کے نام پر دھوکہ دیا جا رہا ہے۔