مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
روہنگیا بحران کے خاتمے کیلئے آنگ سان سوچی کے پاس آخری موقع
نیویارک/ نیپیدو: برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق اقوام متحدہ نے خبردار کیا ہے کہ روہنگیا بحران کے خاتمے کیلئے میانمار کی رہنما آنگ سان سوچی کے پاس اب آخری موقع ہے۔ اگر انھوں نے فوری عمل نہیں کیا تو یہ سانحہ خوفناک رخ اختیار کر لے گا۔ بی بی سی کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل اینتونیو گوتریز کا کہنا ہے کہ اگر سوچی نے حالات کا رخ نہ موڑا تو روہنگیا بحران بہت بھیانک ہو جائے گا اور بدقسمتی سے مستقبل میں اس کے بدلنے کا امکان بھی نظر نہیں آ رہا۔خیال رہے کہ میانمار کی فوج کے ظلم و جبر سے بھاگ کر بنگلا دیش آنے والے روہنگیا مسلمانوں کی تعداد 4 لاکھ تک پہنچ چکی ہے، جس میں گزرتے دن کے ساتھ اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آنگ سان سوچی پر سخت تنقید کی جا رہی ہے کہ وہ اس خراب ہوتی صورتحال کو درست کرنے میں ناکام رہی ہیں۔یو این سیکرٹری جنرل نے میانمار حکومت پر زور دیا کہ وہ بنگلا دیش جانے والے پناہ گزینوں کو واپس آنے کی اجازت دے۔ خیال رہے کہ میانمار کے آرمی چیف مِن آنگ لینگ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ روہنگیا مسلمانوں کا ہمارے ملک سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ وہ صرف میانمار میں شناخت کے متلاشی ہیں اور یہ ممکن نہیں ہے کیونکہ یہ لوگ کبھی بھی اِس ملک کا نسلی گروپ نہیں رہے۔