مقبول خبریں
ن لیگ برطانیہ و یورپ کا نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی سزائیں معطل ہونے پر اظہار تشکر
قاضی انویسٹ منٹ کی جانب سے وطن کی محبت میں ڈیم فنڈ کیلئے ایک لاکھ پائونڈ عطیہ کا اعلان
تحریک حق خود ارادیت انٹر نیشنل کے ساتھ ملکر کشمیر کانفرنس کا انعقاد کرینگے :کرس لیزلے و دیگر
ڈیم سے روکنے کی کوشش پر غداری کا مقدمہ چلے گا: چیف جسٹس پاکستان
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ سے شہری شہید، حریت رہنماؤں کی شدید مذمت
لوٹن میں بھی پی ٹی آئی کی کامیابی کا جشن، ڈھول کی تھاپ پر سڑکوں پر رقص اور بھنگڑے
آکاس انٹرنیشنل کی جانب سے پیرس فرانس میں پہلے یورپین فیملی فنگشن کا انعقاد
پاکستان سے تشریف لائے ممبر پنجاب اسمبلی فیاض احمد وڑائچ کا دورہ منہاج ویلفیئر فائونڈیشن
ہم دھوپ میں بادل کی، درختوں کی طرح ہیں!!!!!!!
پکچرگیلری
Advertisement
پیٹربرا کے دو معروف ریسٹورنٹس میں لال بیگزوں کی موجودگی، ضابطہ اخلاق کے نفاذ تک سیل !!
پیٹربرا ... ہیلتھ اینڈ سیفٹی کی خطرناک صورتحال سے دوچار کونسل کی طرف سے بند کئے گئے ایشیائی کھانوں کے دو مقبول یسٹورنٹس تیزی سے تمام مروجہ اصولوں کو خاطر میں لا کر انہیں جلد از جلد دوبارہ کھولنے کیلئے پرامید ہیں۔ مقامی اجگلش اخبار کے مطابق بورجز بلیوارڈ پر ایک دوسرے کے آمنے سامنے واقع اے ایف سی اور علیز بالٹی ہاوٴس پر کونسل افسران نے چھاپا مارا تو خوراک کے ٹکڑوں اورچٹنیوں پر لال بیگ اور دوسرے کیڑوں کی موجودگی کا علم ہونے کے بعد انہیں عارضی طور پر بند کردیا گیا تھا۔ کونسل افسران کے مطابق انہوں نے دیکھا کہ ایک فرج میں تیاری سے قبل خوراک کے ٹکڑوں اور ساس کے پیالوں میں لال بیگ موجود تھے۔ فرج کے اندر جراثیم کے انڈے اور نشوونما پانے والے لاروے بھی پائے گئے۔ انہوں نے کچن کی دیواروں اور فرج کے نچلے حصے میں کیڑے مکوڑوں کو رینگتے ہوئے پایا۔ ایک ریسٹورنٹ کی ایک ایک شلیف سے فولڈر ہٹانے پر وہاں زندہ اور مردہ لال بیگ کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔ فریزر اور فرج کے نچھلے حصے میں بھی کیڑوں مکوڑوں اور مرے ہوئے لال بیگ کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔ کمرے کے کونوں کھدروں اور چھت سے متصل جگہوں پر بھی کیڑے مکوڑوں اور لال بیگ موجود تھے۔ پیٹربرا مجسٹریٹ کی عدالت میں دونوں ریستورانز کو حفظان صحت کی ایمرجنسی پابندیوں کے احکامات دے کر ہائیجن سرٹیفکیٹ کے اجراء تک دونوں آوٴٹ لیٹس کو بند رکھنے کا حکم دیا گیا واضع رہے دونوں بزنس ایک ہی فیملی کی ملکیت ہیں اور مجسٹریٹ کورٹ سے دونوں ریسٹورنٹس کو مجموعی طور پر ١٤٠٠ پائنڈز جرمانہ ہوا ہے۔